ضلع گلگت کے متعدد سکولوں نے قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی بورڈ سے دوبارہ الحاق کے لئے رجوع کرلیا

اتوار 28 نومبر 2021 00:12

گلگت (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 27 نومبر2021ء)ضلع گلگت کے متعدد سکولوں نے قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی بورڈ سے دوبارہ الحاق کے لئے رجوع کرلیا۔ ڈائریکٹوریٹ آف پبلک ریلیشنز آفس کے مطابق نومل اور نلتر میں قائم دو پرائیویٹ سکولوں کی درخواست پر کنٹرولر امتحانات واجد حسین کی سربراہی میں ایڈیشنل رجسٹرار ایڈمنسٹریشن شاہد احمد شگری اور سیکرٹری افیلیشن جہانگیر احمد پر مشتمل ٹیم نے نومل میں قائم سکائی اکیڈمی کا دورہ کیا۔

سکول کے پرنسپل عبدالامین نے اپنے سکول کے بارے میں بریفنگ دی۔ پرنسپل نے کہا کہ قراقرم یونیورسٹی بورڈ کی نئی انتظامیہ سے ہمیں بہت توقعات وابستہ ہیں۔ ہماری خواہش ہے کہ ہم اپنے سکول کوقراقرم یونیورسٹی بورڈ سے منسلک کریں کیونکہ ہمارے اس علاقے کے تعلیمی اداروں کے لئے قراقرم یونیورسٹی بورڈ سے بہتر کوئی بورڈ نہیں ہوسکتا۔

(جاری ہے)

ٹیم نے سکول کی لائبیریری، کلاس رومز اور دیگر حصوں کا معائنہ کیا۔

بعدازاں افیلیشن ٹیم نے پی اے ایف کے زیرنگرانی چلنے والے نلتر میں قائم فالکن ہائرسکینڈری سکول کا دورہ کیا۔ جہاں سکول کی پرنسپل شاہدہ بانو اور سٹاف نے ٹیم کا استقبال کیا اور جدید طرز پرتعمیر سکول اور تمام سہولیات سے آراستہ سکول کے مختلف حصوں کا دورہ کرایا۔ سکول پرنسپل نے کہا کہ یہ سکول پی اے ایف کے زیرنگرانی چل رہا ہے، اس کے معیار کو برقرار رکھنے کے لئے سکول انتظامیہ نے قراقرم یونیورسٹی بورڈ سے الحاق کا فیصلہ کیا ہے۔

ہمیں امید ہے کہ بورڈ انتظامیہ ہماری درخواست پر غور کریگی۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کنٹرولر امتحانا ت واجد حسین نے کہا کہ یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسرڈاکٹر عطا اللہ شاہ نے قراقرم یونیورسٹی شعبہ امتحانات کو ایک خودمختار امتحانی بورڈ کے قیام کی طرف لے جانے کے لئے ٹھوس اقدامات اٹھائے ہیں جس کے نتیجے میں گلگت بلتستان کے نہ صرف پرائیویٹ تعلیمی اداروں بلکہ سرکاری سکول و کالجز انتظامیہ بھی یونیورسٹی بورڈ سے الحاق کے خواہشمند ہیں۔

اس سلسلے میں محکمہ ایجوکیشن کے اعلی حکام سے ہماری بات چیت جاری ہے ، انشا اللہ بات چیت کا عمل جیسے مکمل ہوگا ہمیں امید ہے کہ کسی بھی بورڈ سے الحاق کا اختیار سکول انتظامیہ کی صوابدید پر ہوگااور تقریبا جی بی کے تمام سرکاری سکول بھی قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی بورڈ سے الحاق کو ترجیح دیں گے۔

گلگت شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments

>