حالیہ بجلی کی قیمت میں ایک روپے 68پیسے اضافے کو فو ری واپس لیا جائے، عبد الستار خان

اتوار جولائی 21:50

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جولائی2018ء) حیدرآباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی حیسکو / پیپکو سب کمیٹی کے چیئر مین عبد الستار خان نے چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار اور چیئر مین نیپرا سے اپیل کی ہے کہ حالیہ بجلی کی قیمت میں ایک روپے 68پیسے اضافے کو فو ری واپس لیا جائے، انہوں نے کہا کہ بجلی کے بلوں میں سرچارج اور ٹیکسوں میں اضافے سے صنعتی سیکٹر پر منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں ، بالخصوص گھریلو صارفین بھاری رقومات کے بجلی کے بلوں کی ادائیگی نہیں کر پاتے ، صنعتی سیکٹرز کے لئے مشکلات بڑھ رہی ہیں،بین الاقوامی مارکیٹ میں مقابلے کا رجحان ہے ، پیداوار ی لاگت بڑھنے سے پاکستانی مصنوعات بین الاقوامی مارکیٹ قیمتوں کا مقابلہ نہیں کر پا رہیں اور ملکی برآمدات میں تاجروں کو مشکلات پیش آ رہی ہیں ، ضرورت اس امر کی ہے کہ بجلی کی قیمتوں میں توازن رکھا جائے کئی گھریلو صنعتیں پہلے ہی بند ہو چکی ہیں، انہوں نے کہا کہ گھریلو صنعتیں عوام کو روزگار کی فراہمی کا ذریعہ ہیں ، حکومت صنعتی سیکٹر کے فروغ کے لئے اقدامات کرے ۔

(جاری ہے)

مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے سے عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو جائے گا، انہوں نے کہا کہ رات کے اوقات میں لوڈشیڈنگ سے گھریلو صارفین سخت پریشان ہیں ، ضرورت اس امر کی ہے کہ رات کے واقعات میں لو ڈ شیڈنگ فو ری ختم کی جائے، غریب اور متوسط طبقے کو بجلی کے بلوں کی ادائیگی میں سخت مشکلات پیش آ رہی ہیں ، بلوں کے بقایا جات اتنے زیا دہ ہو جاتے ہیں کہ غریب آدمی اپنی ذاتی ملکیت فروخت کرنے پر مجبور ہو جاتا ہے ، ضرورت اس امر کی ہے کہ گھریلو بجلی کے نرخوں میں بہتری لائی جائے تاکہ عام شہری باآسانی بجلی کے بلوں کی ادائیگی کر سکے، انہوں نے کہا کہ حیسکو کنڈا مافیا پر کنٹرل کرنے میں بری طرح ناکام ہو چکا ہے اور کنڈا سسٹم کے ذریعے لائن لاسز صارفین سے ڈٹیکشن کے ذریعے وصول کئے جا رہے ہیں جو کہ صارفین کی حق تلفی ہے ، میں حیسکو چیف سے بھی اپیل کروں گا کہ وہ کنڈا سسٹم کو ختم کرانے کے لئے اپنے تمام وسائل استعمال کریں تاجر برادری ہر ممکن تعاون کرے گی ۔

حیدرآباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments