کسی بھی فرد کو پکڑ کر لا پتہ نہیں کیا جانا چاہئے، ،ایازلطیف پلیجو

جس کے خلاف مقدمہ ہو اسے گرفتار کر کے 24 گھنٹے میں عدالت میں پیش کرنا ضروری ہے

ہفتہ 23 اکتوبر 2021 23:11

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 23 اکتوبر2021ء) قومی عوامی تحریک کے سربراہ ایاز لطیف پلیجو ایڈوکیٹ نے کہا ہے کہ کوئی فرد پکڑ کر لا پتہ نہیں کیا جانا چاہئے، جس کے خلاف مقدمہ ہو اسے بھی گرفتار کر کے 24 گھنٹے میں عدالت میں پیش کرنا ضروری ہے، مطلوب شخص کے عزیزوں خصوصا خواتین کو گرفتار کرنا غیرآئینی اور غیرقانونی ہے۔

(جاری ہے)

ایک بیان میں ایاز لطیف پلیجو نے کہا کہ مہنگائی کرپشن بیروزگاری عروج پر ہے انتہا پسندی کو عسکریت پسندی میں تبدیل کیا جا رہا ہے، پاکستان دنیا میں تنہا ہو کر رہ گیا ہے، انہوں نے کہا کہ ڈالر 174 روپے تک پہنچ گیا ہے پارلیمنٹ اور عدلیہ اس سے لا تعلق ہیں، ذاتی مفادات اور سرکاری مناصب کے لئے ایک دوسرے کے خلاف نئے مہرے میدان میں اتارے جا رہے ہیں اور 22 کروڑ عوام کو تباہ کیا جا رہا ہے، انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ اور سندھ اسمبلی میں موجود سندھ کے نمائندوں کو سندھ کی وحدت مالی وسائل روزگار صوبائی خود مختاری اور دریائی پانی کی تقسیم کے ایشوز پر اپنا واضع موقف اختیار کرنا ہو گا، سندھ دشمن گروہ سندھ کے عوام کو ان کے حق حکمرانی سے محروم رکھنا اور دیوار سے لگانا چاہتے ہیں۔

حیدرآباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments