افغانستان پر بیرونی حملے روکنے کیلئے افغانستان کو ڈرون شکن اور طیارہ شکن ہتھیار فراہم کرنے ہوں گے ، عبدالقیوم شیخ

جمعہ 26 نومبر 2021 20:20

حیدرآباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 26 نومبر2021ء) سابق رکن سندھ اسمبلی عبد القیوم شیخ نے کہا ہے کہ چین ترکی اور روس کے پاکستان میں مقیم سفارت کار جانتے ہوں گے کہ سمندر پار سے جنگی طیاروں کے ذریعے افغانستان پر ڈرون حملوں کے درپردہ عزائم کیا ہیں تاہم افغانستان محفوظ ہوگا تو چین ترکی اور روس بھی محفوظ ہوں گے یہ بات کسی سے ڈھکی چھپی نہیں انہیں افغانستان پر بیرونی حملے روکنے کیلئے افغانستان کو ڈرون شکن اور طیارہ شکن ہتھیار فراہم کرنے ہوں گے یورپ اور امریکہ کے مشترکہ حملوں پر اقوام متحدہ کی خاموشی پر سوالات اُٹھ رہے ہیں بھارت کی دہشت گردی کسی کو نظر نہیں آرہی اپنے مقاصد کی تکمیل کیلئے انسانی حقوق یاد آجاتے ہیں یورپ اور امریکہ کی دوسری عالمی جنگ کے بعد اقوام متحدہ کا وجود عمل میں آیا امریکہ کو اقصادی پابندی لگانے کے بعد فرانس کو ایف اے ٹی ایف بناکر دنیا پر راج کرنے کا اختیار کس نے دیا عوام لاعلم ہیں ان حالات میں جو صدیوں سے خاندانی غلام ہوں گے وہ خطرے سے دوچار ہوں ے چین ترکی اور روس کو اپنی بقاء اور سلامتی کیلئے اپنے ہمسایہ ملکوں کو جدید ہتھیار فراہم کرنے ہوں گے ۔

حیدرآباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments