براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری میں مالی سال کے ابتدائی دوماہ میں 40 فیصد اضافہ ریکارڈ

جمعہ ستمبر 14:45

براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری میں مالی سال کے ابتدائی دوماہ میں 40 فیصد ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 18 ستمبر2020ء) ملک میں براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری میں جاری مالی سال کے ابتدائی دوماہ میں گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے مقابلے میں 40 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ سٹیٹ بینک کی جانب سے اس حوالہ سے جاری کردہ اعداد و شمارکے مطابق جولائی سے لے کر اگست 2020 تک کی مدت میں ملک میں براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری کا حجم 227 ملین ڈالر ریکارڈکیاگیا جو گزشتہ مالی سال کے اسی عرصہ کے مقابلے میں 40 فیصد زیادہ ہے۔

گزشتہ مالی سال کے ابتدائی دوماہ میں ملک میں براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری کا حجم 162 ملین ڈالرریکارڈکیا گیا تھا۔سب سے زیادہ براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری ناروے، مالٹا اور ہالینڈ کی جانب سے کی گئی ہے جس کا مجموعی تناسب 54 فیصد بنتاہے۔

(جاری ہے)

ناروے نے اس عرصہ میں 45 ملین ڈالر، ہالینڈ نے 41 ملین ڈالراورمالٹا کے سرمایہ کاروں نے 37 ملین ڈالرکی براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری کی ہے۔

فنانشل بزنس اورکمیونیکیشن دوایسے شعبے ہیں جہاں سب سے زیادہ غیرملکی سرمایہ کاری ریکارڈکی گئی ہے، فنانشل بزنس کے شعبہ میں جاری مالی سال کے ابتدائی دوماہ میں 85 ملین ڈالر اورکمیونیکیشن کے شعبہ میں 36.5 ملین ڈالر کی براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری ریکارڈکی گئی ہے۔ اسی طرح تیل وگیس کے شعبہ میں 34.3 ملین ڈالر کی براہ راست غیرملکی سرمایہ کاری ہوئی۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments