اُردو پوائنٹ پاکستان اسلام آباداسلام آباد کی خبریںپاکستان اور ایشیائی ترقیاتی بینک کے درمیان 32 کروڑ 50 لاکھ ڈالر قرض کا ..

پاکستان اور ایشیائی ترقیاتی بینک کے درمیان 32 کروڑ 50 لاکھ ڈالر قرض کا معاہدہ طے پاگیا

معاہدے کے تحت 23 کروڑ 80 لاکھ ڈالر خیبر پختونخوا میں جبکہ 8 کروڑ 70 لاکھ ڈالر پنجاب میں خرچ کیے جائیں گے , بینک کے مالی تعاون کے ذریعے صوبہ خیبر پختونخوا ، پنجاب کے بجلی سے محروم علاقوں کو ٹارگٹ کیا جائے گا،توانائی سیکیورٹی کو بڑھانے کا مقصد حاصل کرنے میں بھی مدد ملے گی

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 فروری2017ء) حکومت پاکستان اور ایشیائی ترقیاتی بینک (اے ڈی بی) کے درمیان 32 کروڑ 50 لاکھ ڈالر قرض کا معاہدہ طے پاگیا۔پاکستان کی جانب سے معاہدے پر اقتصادی امور ڈویڑن کی ایڈیشنل سیکریٹری انجم اسد امین اور پاکستان میں اے ڈی بی کے کنٹری ڈائریکٹر ورنر لی پیک نے دستخط کیے، جبکہ اس موقع پر وفاقی وزیر خزانہ اسحٰق ڈار بھی موجود تھے۔

ایشیائی ترقیاتی بینک کے مالی تعاون کے ذریعے صوبہ خیبر پختونخوا اور پنجاب کے بجلی سے محروم علاقوں کو ٹارگٹ کیا جائے گا، جس سے پاکستان کی توانائی سیکیورٹی کو بڑھانے کا مقصد حاصل کرنے میں بھی مدد ملے گی۔پروگرام پر 5 سال سے زائد عرصے (2021 ط 2017) تک عملدرآمد کیا جائے گا۔پروگرام کے تحت خیبر پختونخوا میں مختلف مقامات پر پن بجلی کے ایک ہزار چھوٹے پاور پلانٹس لگائے جائیں گے، جن میں سے 7 فیصد (70) مائیکرو ہائیڈرو پاور پلانٹس ان گھروں کو دیئے جائیں گے جن کی سربراہ خاتوں ہوں گی۔

(خبر جاری ہے)

معاہدے کے تحت پنجاب کے 17 ہزار 400 اور خیبر پختونخوا میں 8 ہزار 187 اسکولوں اور بنیادی مراکز صحت میں شمسی توانائی کے آلات کی تنصیب شامل ہے، جس میں 30 فیصد صرف لڑکیوں کے اسکول ہوں گے۔بہاولپور یونیورسٹی کو بھی شمسی توانائی کی سہولت فراہم کی جائے گی۔معاہدے میں دونوں صوبوں کی خواتین کو ان کی مہارت بڑھانے کے لیے ٹریننگ دینے کی شِق بھی شامل ہے۔مجموعی طور پر معاہدے کے تحت 23 کروڑ 80 لاکھ ڈالر خیبر پختونخوا میں جبکہ 8 کروڑ 70 لاکھ ڈالر پنجاب میں خرچ کیے جائیں گے۔۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

اسلام آباد شہر کی مزید خبریں