اُردو پوائنٹ پاکستان اسلام آباداسلام آباد کی خبریں انٹر یونیورسٹی کنسورشیم برائے فروغ سماجی علوم کا سماجی علوم کی پہلی ..

انٹر یونیورسٹی کنسورشیم برائے فروغ سماجی علوم کا سماجی علوم کی پہلی نمائش اور بین لاقوامی کانفرنس کرانے کا فیصلہ

اسلام آباد ۔ 6 جولائی (اُردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 06 جولائی۔2015ء) پاکستان کی 20 یونیورسٹیوں کی تنظیم انٹر یونیورسٹی کنسورشیم برائے فروغ سماجی علوم نے ملک میں سماجی علوم کی اہمیت اورآگاہی کے لئے سماجی علوم کی پہلی نمائش اور بین لاقوامی کانفرنس کرانے کا فیصلہ کیا ہے کہ پاکستان جن موجودہ حالات سے گزر رہا ہے ان کا حل سماجی علوم کی ترقی میں مضمر ہے اور بین لاقوامی تعلقات سماجی خدمات، سیاحت، ثقافت اور ادب کو فروغ دیکر ہم ایک بہتر معاشرہ قائم کر سکتے ہیں۔

اس ضمن میں پاکستا ن کی پہلی سماجی علوم کی نمائش اکتوبر2015ء کے پہلے ہفتے جبکہ دوسری سماجی علوم کی بین لاقوامی کانفرنس 9 اور 10 جنوری 2016ء کو اسلام آباد میں منعقد ہوگی جبکہ جولائی 2015ء سے جون 2016ء کے مالی سال کو سماجی علوم کا سال منایا جائے گا۔

(خبر جاری ہے)

ان دونوں ایونٹس کی سربراہی عبد الولی خان یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر احسان علی کریں گے۔

اس سلسلے میں گزشتہ روز 20یونیورسٹیوں کی تنظیم انٹر یونیورسٹی کنسورشیم برائے فروغ سماجی علوم کے چیئرمین ڈاکٹر ناصر علی خان کی زیر صدارت اجلاس منعقد ہوا جس میں فیصلہ کیا گیا کہ سماجی علوم کی نمائش میں پاکستان کی یونیورسٹیوں میں سکھائے جانے والے مختلف علوم کے شعبوں کو عوامی اور خصوصی طور پر نوجوانوں کے ساتھ پیش کیا جائے گا۔ آرٹ، لسانیات، معاشیات،عمرانیات،بین لاقوامی تعلقات، ابلاغ عامہ کے مختلف پویلین بنائے جائیں گے ۔

چیئرمین ڈاکٹر ناصر علی خان نے کہا کہ سماجی علوم کے زریعے ہم پاکستا ن میں برداشت کے کلچر کو فروغ دے سکتے ہیں ۔ جبکہ آرٹ ، آرکیالوجی اور سیاحت کو فروغ دیکر ہم پاکستان کا ایک بہتر تشخص دنیا کے سامنے پیش کر سکتے ہیں ان ایونٹس کو منعقد کروانے کا مقصد پاکستانی قوم کو سماجی علوم کی اہمیت سے آگاہ کرنا ہے ۔ بین لاقوامی تعلقات سماجی خدمات، سیاحت، ثقافت اور ادب کو فروغ دے کر ہم ایک بہتر معاشرہ قائم کر سکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سماجی علوم پر ہونے والی بین لاقووامی کانفرس سے پاکستان کی یونیورسٹیو ں اور اساتذہ کو اپنی تحقیق بین لاقوامی سطح پر متعارف کرانے میں نہ صرف مدد ملے گی بلکہ انہیں بین لاقوامی سکالرز سے بہت کچھ سیکھنے کوملے گا۔ اس موقع پر پروفیسر ڈاکٹر احسان علی نے کہا کہ ان دونوں اہم ایونٹس کو حتمی شکل دے دی گئی ہے اس کے انعقاد سے پاکستان کا امیج عالمی سطح پر بہتر جائے گا۔


اپنی رائے کا اظہار کریں -

اسلام آباد شہر کی مزید خبریں