اُردو پوائنٹ پاکستان اسلام آباداسلام آباد کی خبریںالیکشن کمیشن نے میاں طارق محمود کے خلاف نااہلی درخواست کی سماعت بائیس ..

الیکشن کمیشن نے میاں طارق محمود کے خلاف نااہلی درخواست کی سماعت بائیس مئی تک ملتوی کر دی، جواب طلب کر لیا

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 اپریل2018ء)الیکشن کمیشن نے رکن پنجاب اسمبلی میاں طارق محمود کے خلاف نااہلی سے متعلق درخواست کی سماعت بائیس مئی تک ملتوی کر دی جبکہ میاں طارق محمود سے جواب بھی طلب کر لیا گیا ۔منگل کو الیکشن کمیشن میں رکن پنجاب اسمبلی میاں طارق محمود کے خلاف نااہلی سے متعلق درخواست پر چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میںپانچ رکنی بینچ نے سماعت کی ، جس میں درخواست گزار میاں محمد اختر حیات کے وکیل مبین قاضی اور رکن پنجاب اسمبلی کے وکیل سید علی ظفر الیکشن کمیشن کے سامنے پیش ہوئے، وکیل سید علی ظفر نے کہا کہ درخواست گزار نے انفرادی حیثیت میں درخواست دائر کی ہے کہ رکن پنجاب اسمبلی کو نااہل کیا جائے۔

یہ آپ کو تحقیقات کرنے کی درخواست نہیں کر سکتے۔

(خبر جاری ہے)

یہ معاملہ الیکشن کمیشن نہیں بلکہ سیشن کورٹ میں دائر ہونا چاہیے تھا۔ درخواست گزار کے وکیل نے کہا کہ رکن پنجاب اسمبلی نے دوہزار اٹھ اور دوہزار تیرہ میں کاغذات نامزدگی میں اثاثے چھپائے۔سالانہ گوشواروں میں بھی اثاثوں کو چھپایا گیا۔ میاں طارق محمود کا اسپین میں کاروبارہے اور وہاں ملازمت بھی کرتے رہے۔ ہم نے تمام ثبوت اپنی درخواست کے ساتھ منسلک کیے ہیں۔ وکیل سید علی ظفر نے کہا کہ یہ مکمل طور پر غلط بیانی کر رہے ہیں یہ تمام الزامات من گھڑت اور جھوٹے ہیں۔الیکشن کمیشن نے رکن پنجاب اسمبلی میاں طارق محمود سے جواب طلب کر تے ہوئے کیس کی سماعت بائیس مئی تک ملتوی کر دی۔


اپنی رائے کا اظہار کریں -

اسلام آباد شہر کی مزید خبریں