نواز شریف کے ایک ہفتے میں ہی اڈیالہ جیل میں ہاتھ پاؤں پھولنے لگ گئے

سابق وزیراعظم نواز شریف ایک ہفتہ بھی جیل میں نہیں گزار سکے، کہتے ہیں مجھے یہاں سے نکالو ورنہ مجھے کچھ ہو جائے گا، معروف صحافی چوہدری غلام حسین کا انکشاف

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعرات جولائی 11:16

نواز شریف کے ایک ہفتے میں ہی اڈیالہ جیل میں ہاتھ پاؤں پھولنے لگ گئے
اسلام آباد (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔19 جولائی 2018ء) معروف صحافی چوہدری غلام حسین کا کہنا ہے کہ نواز شریف جیل میں تنگ آ گئے ہیں اور اب اذانیں دینے لگ گئے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق معروف صحافی چوہدری غلام حسین کا کہنا ہے کہ نواز شریف جیل جانے سے پہلے بڑی بڑی باتیں کرتے تھے کہ میں پھانسی سے نہیں ڈرتا۔لیکن ابھی انہیں جیل میں ایک ہفتہ بھی نہیں گزرا اور وہ جیل میں اذانیں دینے لگ گئے۔

اور کہنے لگ گئے مجھے یہاں سے نکالو۔اگر میں اڈیالہ جیل میں رہ گیا تو میری یہاں سے لاش ہی جائے گی۔اور پھرموت کے ذمہ دار بھی یہی لوگ ہوں گے۔چوہدری غلام حسین کا کہنا ہے کہ نواز شریف جیل میں کہتے ہیں کہ مجھے بہت گھبراہٹ محسوس ہو رہی ہے اور مجھے چھاتی پر بہت بوجھ محسوس ہو رہا ہے۔خدا کے واسطے ڈاکٹر کو بلاؤ۔

(جاری ہے)

نواز شریف کہتے ہیں کہ اگر میں ان حالات میں جیل رہا تو میری زندگی کا کچھ پتہ نہیں۔

یاد رہے گذشتہ روز نواز شریف اور ان کے داماد کیپٹن (ر) صفدر کو جیل میں لوہے کی چارپائیاں دی گئی تھیں۔ جو سفیدسوتی نوارسے بُنی ہوئی ہیں جن کے اوپربچھانے کیلئے فوم کے گدے دئیے گئے ہیں یہ چارپائیاں بہترکلاس کے اسیروں کودی جاتی ہیں۔ اس سے قبل نوازشریف اورکیپٹن (ر)صفدرزمین پرمیٹرس بچھا کر سوتے رہے۔ جبکہ مریم نوازکوپہلے ہی اسی قسم کی چارپائی دی گئی ہے، جیل ذرائع کے مطابق مریم نوازنے چارپائی پر گدے کے بجائے تلائی منگوائی۔

جب کہ نواز شریف کے لیے 3 ڈاکٹروں کی تقرری بھی کر دی گئی ہے۔ اس سے قبل نواز شریف کو باتھ روم گندا ہونے کی بھی شکایت تھی۔جس پر ان کا کمرہ تبدیل کر دیا گیا تھا۔ تاہم اب موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق نواز شریف کے نئے کمرے کا باتھ روم قدرے بہتر ہے۔ دو روز قبل گرمی اور حبس کے باعث نواز شریفکی طبیعت میں بے چینی پائی گئی۔ جس پر ان کا چیک اپ کیا گیا۔ ڈاکٹرز نے نواز شریف کا بلڈ پریشر، شوگر اور نبض چیک کی۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments