اُردو پوائنٹ پاکستان اسلام آباداسلام آباد کی خبریںسپریم کورٹ میں منی لانڈرنگ کیس کی سماعت ، انور مجید ، عبدالغنی کمرہ ..

سپریم کورٹ میں منی لانڈرنگ کیس کی سماعت ،

انور مجید ، عبدالغنی کمرہ عدالت سے گرفتار

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔15اگست 2018ء): سپریم کورٹ میں منی لانڈرنگ کیس کی سماعت ہو رہی ہے۔ آج سماعت کے موقع پر انور مجید چاروں بیٹوں سمیت عدالت میں پیش ہو گئے۔ جہاں دورانِ سماعت انور مجید اور عبدالغنی کو کمرہ عدالت کے باہر سے گرفتار کر لیا گیا۔ عدالت نے انور مجید فیملی کو شامل تفتیش کرنے کا حکم دیا ہے۔ اس موقع پر چیف جسٹس نے کہا کہ ہم نے گرفتار کرنے کا کہا نہ ہی گرفتاری کے احکامات دیئے۔

(خبر جاری ہے)

ایف آئی اے گرفتار کرنا چاہتی ہے تو کر لے یہ ایف آئی کی صوابدید ہے وہ کیا کرتی ہے۔ عدالت نے انور مجید کے وکیل شاہد حامد کی ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست مسترد کر دی ۔ انور مجید کے وکیل شاہد حامد نے اس موقع پر کہا کہ انور مجید اور دیگرکا نام ای سی ایل میں ہے یہ باہر نہیں جا سکے ۔ جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ کس نے ان کا نام ای سی ایل میں رکھنے کیلئے کہا؟ جس کا جواب دیتے ہوئے ڈی جی ایف آئی اے نے بتایا کہ عدالتی حکم میں موجود ہے کہ ان کا نام ای سی ایل میں ڈالا جائے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

اسلام آباد شہر کی مزید خبریں