اُردو پوائنٹ پاکستان اسلام آباداسلام آباد کی خبریںنوازشریف کی سزا پری پول دھاندلی اور انتخابی میدان سے باہر نکالنا تھا ..

نوازشریف کی سزا پری پول دھاندلی اور انتخابی میدان سے باہر نکالنا تھا ،ْاحسن اقبال

سارے مقدمات میں نوازشریف، مریم نواز اور صفدر سرخروں ہوں گے ،ْ انصاف کا بول بالا ہوگا ،ْ خواجہ آصف

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 ستمبر2018ء)مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں نے نوازشریف کی رہائی کے حکم کے عدالتی فیصلے پر رد عمل میں کہا ہے کہ نوازشریف کی سزا پری پول دھاندلی اور انہیں انتخابی میدان سے باہر نکالنا تھا ،ْنیب کا فیصلہ انتقام پر مبنی تھا ،ْ یہ نان پی سی او انصاف کی ایک جھلک ہے۔بدھ کو عدالتی فیصلے کے بعد اسلام آباد ہائیکورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ نیب کا وہ فیصلہ جو انتقام پر مبنی تھا وہ معطل ہوا ہے، یہ ٹرائل اس لحاظ سے بے حد اہم ہے، اس ٹرائل میں اگر پاکستان میں اندھا شخص تھا اسے بھی نظر آگیا ہے ان مقدمات میں آئین ہے اور نہ قانون، اس میں صرف انتقام اور پری پول دھاندلی تھی جس کا مقصد نواز شریف کو انتخابی میدان سے باہر نکال کر عمران خان کی جعلی کامیابی کیلئے راہ ہموار کرنا تھا۔

(خبر جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ عدالتی فیصلے پر پاکستان کے عوام اور ملک بھر میں مسلم لیگ (ن) کے کارکنان کو مبارکباد دیتا ہوں، اللہ تعالیٰ نے (ن) لیگ کے کارکنان کی دعائیں قبول کی ہیں۔احسن اقبال نے کہا کہ یہ نان پی سی او انصاف کی ایک جھلک ہے۔احسن اقبال نے کہا کہ میں کراچی سے خیبر تک تمام لیگی کارکنان کو اس فیصلے پر مبارکباد پیش کرتا ہوں۔اس موقع پر خواجہ آصف نے کہاکہ عدالتی فیصلے پر اللہ تعالیٰ کا جتنا شکر ادا کریں کم ہے ،ْ انصاف کی فتح ہوئی ہے ،ْ نواز شریف کے چاہنے والوں کو مبارکباد دیتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان سارے مقدمات میں نوازشریف، مریم نواز اور صفدر سرخروں ہوں گے اور انصاف کا بول بالا ہوگا۔لیگی رہنما نے کہا کہ اب جاکر نوازشریف کو جیل سے باہر لائیں گے۔انہوں نے کہا کہ کراچی سے گلگت تک تمام لیگی رہنماؤں کو اس فیصلے پر مبارک ہو۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

اسلام آباد شہر کی مزید خبریں