سپریم کورٹ نے اسحاق ڈار کو یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز لاہور کے بورڈ آف گورنرز کی چیئرمین شپ سے ہٹا نے کاحکم جاری کرد،

پنجاب حکومت تین روز میں نئے چئیرمین بورڈ کا انتخاب کرے، سپریم کورٹ کی ہدایت

بدھ ستمبر 19:38

سپریم کورٹ نے اسحاق ڈار کو یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز لاہور کے بورڈ ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 ستمبر2018ء) سپریم کورٹ نے سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز لاہور کے بورڈ آف گورنرز کی چیئرمین شپ سے ہٹا نے کاحکم جاری کردیا ہے اورپنجاب حکومت کوہدایت کی ہے کہ تین روز میں نئے چئیرمین بورڈ کا انتخاب عمل میں لایا جائے ۔ بدھ کوچیف جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز لاہور کے غیر فعال بورڈ آف گورنر کے حوالے سے کیس کی سماعت کی،اس موقع پر چیف جسٹس نے کہا کہ اسحاق ڈاریونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز لاہور کے غیر فعال بورڈ کے چیرمین ہیں ، لیکن اب وہ نہیں آ رہے، دوسری جانب قواعد کے مطابق سال میں دو مرتبہ بورڈ کی میٹنگ کاانعقاد ضروری ہوتاہے لیکن 21 نومبر2016 ء کے بعد بورڈ کی میٹنگ نہیں ہو سکی، کیونکہ بورڈ آف گورنرز کے چیئرمین کی عدم موجودگی کے باعث بورڈ غیر فعال ہے۔

(جاری ہے)

چیف جسٹس نے مزیدکہا کہ عدالت مختلف مقدمات میں نیب، ایف آئی اے اور وزارت خارجہ کو پہلے ہی ہدایات جاری کرچکی ہے کہ اسحاق ڈار کی واپسی کویقینی بنایا جائے، جو نیب کے مقدمے میں مفرور ہیں،اورعدالت ان کو اشتہاری قرار دے کر ریڈ وارنٹ جاری کرچکی ہے ان کا ڈپلومیٹک پاسپورٹ بھی منسوخ ہو چکا ہے اس صورتحال میںعدالت اسحاق ڈار کو بورڈ آف گورنرز کی چیئرمین شپ سے ہٹا نے کاحکم جاری کرتی ہے ، بعدازاں عدالت نے اسحاق ڈار کو بورڈ آف گورنرز کی چیئرمین شپ سے ہٹاتے ہوئے پنجاب حکومت کو حکم دیا کہ نئے چئیرمین بورڈ کے انتخاب عمل میں لایا جائے حکم دیدیا ، بعد ازاں عدالت نے اس معاملے پر وزارت خارجہ سمیت دیگر اسٹیک ہولڈرز سے جواب طلب کر تے ہوئے نوٹس جاری کردیئے اورمزید سماعت ملتوی کردی۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments