وزیراعظم عمران خان نے سپیکر قومی اسمبلی کواسمبلی میں اخلاقی کمیٹی کے قیام کی ہدایات جاری کر دیں،

کمیٹی کا بنیادی مقصد نازیبا زبان کے استعمال کا مکمل خاتمہ ہو گا، ذاتیات پر حملوں کو روکنے کے لیے حکومت سنجیدہ ہے، وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی امور نعیم الحق کی نجی ٹی وی چینل سے گفتگو

پیر نومبر 23:38

وزیراعظم عمران خان نے سپیکر قومی اسمبلی کواسمبلی میں اخلاقی کمیٹی ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 نومبر2018ء) وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے سیاسی امور نعیم الحق نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نی سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کو اسمبلی میں فوری طور پر ایک اخلاقی کمیٹی کے قیام کی ہدایات جاری کر دی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پیر کو ایک نجی ٹی وی چینل کے پروگرام ’’7 سے 8‘‘ میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ اس کمیٹی میں حکومت اور اپوزیشن دونوں کے اراکین شامل ہوں گے جس کا بنیادی مقصد قومی اسمبلی میں نازیبا زبان کے استعمال کا مکمل خاتمہ ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز اور اس سے قبل بھی پاکستان مسلم لیگ (ن) کی جانب سے نازیبا زبان استعمال کی گئی جس کی میں شدید مذمت کرتا ہوں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ نازیبا زبان کا استعمال اور ذاتیات پر حملے کہیں سے بھی ہوں وہ قابل قبول نہیں اور گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان نے سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کو ہدایت کی ہے کہ قومی اسمبلی میں ہونے والی بدزبانی اور ذاتیات پر حملوں کو مکمل طور پر ختم کیا جائے اور حکومت اور اپوزیشن دونوں جانب سے اراکین اسمبلی پر مشتمل ایک ایسی کمیٹی قائم کی جائے جو اس بات کا فیصلہ کرے کہ قومی اسمبلی میں حد سے بڑھ کر ذاتیات پہ کیے جانے والے حملوں کو کیسے روکا جائے اور صرف عوامی مسائل پر گفتگو ہو۔

(جاری ہے)

معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ قومی اسمبلی میں بدزبانی اور ذاتیات پر حملوں کو روکنے کے لیے حکومت سنجیدہ ہے اور یہی وجہ ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے فوری طور پر اس کمیٹی کے قیام کی ہدایات جاری کی ہیں اس لیے امید ہے کہ آج یا کل تک اس کمیٹی کا قیام عمل میں لایا جائے گا۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments