چیئرمین نیب جسٹس(ر) جاوید اقبال کا نیب لاہور کا دورہ

ڈائریکٹر جنرل نیب لاہور شہزاد سلیم نے میگا کرپشن کیسز میں جاری تحقیقات اور اہم پیشرفت پر بریفنگ دی نیب کی وجہ سے ملکی معیشت پر کسی قسم کے منفی اثرات مرتب نہیں ہوئے، نیب نے جب کسی سے پوچھا کہ پانچ ہزار کے کام پر 50 ہزار کیسے خرچ ہوئے تو سب نیب کے خلاف اکٹھے ہو گئے، نیب ملکی بزنس معاملات میں پارٹی نہیں اور نہ ہی نیب کی وجہ سے کبھی کسی معاہدے پر منفی اثرات مرتب ہوئے چیئرمین جسٹس(ر) جاوید اقبال کی کنسٹرکشن ایسوسی ایشن کے وفد سے گفتگو

منگل نومبر 23:18

چیئرمین نیب جسٹس(ر) جاوید اقبال کا نیب لاہور کا دورہ
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 نومبر2018ء) قومی احتساب بیورو (نیب) کے چیئرمین جسٹس(ر) جاوید اقبال نے منگل کو نیب لاہور کا دوسرے روز دورہ کیا جہاں ڈائریکٹر جنرل نیب لاہور شہزاد سلیم نے انہیں میگا کرپشن کیسز میں جاری تحقیقات اور اہم پیشرفت پر جامع بریفنگ دی۔ اس موقع پر پاکستانی بزنس کمیونٹی سے کنسٹرکشن ایسوسی ایشن (سی اے پی) کے مرکزی نمائندگان نے بزنس کمیونٹی کو درپیش مسائل کے حوالے سے چیئرمین نیب سے ملاقات کی۔

نمائندگان کا کہنا تھا کہ ماضی میں 80 فیصد ملکی میگا پراجیکٹس بیرونی ممالک کی کمپنیوں کو فراہم کر دیئے گئے۔ نیب انکوائریوں میں بزنس کمیونٹی میں موجود کرپٹ عناصر کو منظر عام پر لانے کے لئے بھرپور مدد کی پیشکش کی گئی۔ چیئرمین نیب نے وفد کے ارکان سے مخاطب ہوتے ہوئے اس تاثر کی نفی کرتے ہوئے کہا کہ نیب کی وجہ سے ملکی معیشت پر کسی قسم کے برے اثرات مرتب نہیں ہوئے، بدعنوانی سمیت دیگر عوامل ملکی معیشت پر اثر انداز ہو رہے ہیں، نیب نے جب کسی سے پوچھا کہ پانچ ہزار کے کام پر 50 ہزار کیسے خرچ ہوئے تو سب نیب کے خلاف اکٹھے ہو گئے، نیب ملکی بزنس معاملات میں پارٹی نہیں ہے اور نہ ہی نیب کی وجہ سے کبھی کسی معاہدے پر منفی اثرات مرتب ہوئے۔

(جاری ہے)

جسٹس(ر) جاوید اقبال نے مزید کہا کہ نیب کا سیاست سے کوئی تعلق نہیں، نیب صرف اور صرف بہتر ملکی مفادات کے لئے کام کر رہا ہے۔ ماضی میں پاکستان کے ترقیاتی منصوبوں کے معاہدات پاکستانی کمپنیوں کی بجائے بین الاقوامی کمپنیوں سے کئے گئے جس کی وجہ سے مقامی بزنس کمیونٹی کی حق تلفی ہوئی۔ اس موقع پر چیئرمین نیب نے کہا کہ اب ایماندار لوگوں کا جینا آسان ہو گا اور نیب کے اقدامات پاکستان میں بزنس کمیونٹی کے استحکام کا موجب ہوں گے۔

چیئرمین نیب نے بزنس کمیونٹی کی مزید سہولت کو مدنظر رکھتے ہوئے فوری طور پر بزنس ڈیسک بنانے کے احکامات صادر کئے جو ڈائریکٹر لیول کے نیب آفیسر کی نگرانی میں بزنس کمیونٹی کو درپیش مسائل کا ازالہ کریں گے۔ نیب پنجاب میں چیئرمین نیب کی ہدایات کی روشنی میں بزنس ڈیسک تشکیل دے دیا گیا ہے جس کی سربراہی ڈائریکٹر خاور الیاس کریں گے، نیب ہیڈ کوارٹرز میں قائم بزنس ڈیسک کی سربراہی ڈائریکٹر عاصم لودھی کر رہے ہیں۔ کنسٹرکشن ایسوسی ایشن کے نمائندگان نے چیئرمین نیب کی جانب سے اٹھائے گئے اقدامات کو سراہا اور کنسٹرکشن کی مد میں کئے گئے معاہدات پر ماہرانہ رائے کے لئے نیب کو بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments