اپوزیشن جماعتوں کا عیدالفطر کےبعد آ ل پارٹیز کانفرنس بلانے کا اعلان

اے پی سی مولانا فضل الرحمن کی سربراہی میں بلائی جائے گی، اپوزیشن جماعتیں حکومت مخالف تحریک کیلئے مشترکہ لائحہ عمل بنائیں گی۔ چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کی شاہد خاقان عباسی، مریم نواز، حمزہ شہباز،مولانا فضل الرحمن ودیگر کے ہمراہ پریس کانفرنس

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ اتوار مئی 22:36

اپوزیشن جماعتوں کا عیدالفطر کےبعد آ ل پارٹیز کانفرنس بلانے کا اعلان
اسلام آباد(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔19 مئی 2019ء) حزب اختلاف کی جماعتوں نے عیدالفطر کے بعد آ ل پارٹیز کانفرنس بلانے کا اعلان کردیا، اے پی سی مولانا فضل الرحمن کی سربراہی میں بلائی جائے گی،اے پی سی میں اپوزیشن جماعتیں حکومت مخالف تحریک کیلئے مشترکہ لائحہ عمل بنائیں گی۔چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے سینئر نائب صدر ن لیگ شاہد خاقان عباسی، مریم نواز، حمزہ شہباز،مولانا فضل الرحمن کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پیپلزپارٹی نے تمام جماعتوں کے رہنماؤں کو افطار پارٹی پر دعوت دی۔

تمام سیاسی جماعتوں کا اپنا منشور ہے، کوئی ایک جماعت ملکی مسائل کا حل نہیں ہے۔مسلم لیگ ن ،اختر مینگل ، جماعت اسلامی، جے یو آئی ف، اے این پی سمیت تمام سیاسی جماعتوں کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ لاپتا افرا د ، مہنگائی سمیت تمام مسائل پر بات چیت کی گئی۔ہمیں لگا کہ ہم ملکر ملکی معیشت کیلئے بہترین پالیسی بنا سکتے ہیں۔ہر جماعت نے عید کے بعدپارلیمنٹ کے اندر اور باہر احتجاج کا اعلان کیا ہے۔

عید کے بعد جے یو آئی ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمن کی سربراہی میں اے پی سی بلائی جائے گی جو تمام جماعتوں کی تحریک کاایک مشترکہ لائحہ عمل مرتب کرے گی۔اس موقع پر جے یو آئی ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ عید الفطر کے بعد تمام سیاسی جماعتوں کی اے پی سی بنائی جائے گی۔آج کی پارٹی اہمیت کی حامل ہے۔جماعتوں نے آنے والے مستقبل بارے سمیت کا تعین کرلیا۔

اے پی سی میں لائحہ عمل مرتب دیں گے ۔ سیاسی جماعتیں ایک ہی پلیٹ فارم پر قوم کی آواز بنیں گی۔ن لیگ کے سینئر نائب صدرشاہد خاقان عباسی نے کہا کہ انتقامی احتساب کو بھگت رہیں گے ، ہمیں پروا نہیں ، لیکن اب ہم نے عوام کی آواز بننا ہے۔پاکستا ن کے عوام امید سے محروم ہوچکے ہیں۔حکومت ملک چلانے اور عوامی مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکی ہے۔اجلاس میں ذاتی یا نام نہاد احتساب کی بات نہیں کی بلکہ قوم کی بات کی ہے۔حاصل بزنجو نے کہاکہ کہا جارہا ہے کہ ہم حکومت کوگرانا چاہتے ہیں لیکن یہ حکومت توویسے ہی گری ہوئی ہے، اس حکومت کو گرانا مسئلہ نہیں ہے۔اے پی سی میں ایک نیا بیانیہ تشکیل دیا جائے گا جو پاکستان کی بقاء کا ضامن ہوگا۔آفتاب شیرپاؤ نے کہا کہ آج عوام جس طرح مشکلات کا شکار ہے۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments