اگر سیلز ٹیکس واپس ہی کرنا ہے تو پھر لیتے کیوں ہیں؟ عبدالرزاق داؤد

ایک دم صفر سے 17فیصد ٹیکس لگانے سے مسائل پیدا ہوں گے،ہم ہمیشہ ریونیو کے پیچھے گئے صنعتی ترقی کے پیچھے نہیں، مشیر تجارت

Usman Khadim Kamboh عثمان خادم کمبوہ بدھ جون 00:10

اگر سیلز ٹیکس واپس ہی کرنا ہے تو پھر لیتے کیوں ہیں؟ عبدالرزاق داؤد
اسلام آباد ( اردوپوائنٹ اخبار تازہ ترین۔25جون2019ء) مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد نے کہا ہے کہ اگر سیلز ٹیکس واپس ہی کرنا ہے تو پھر لیتے کیوں ہیں؟ انہوں نے کہا کہ مقامی فروخت پر سیلز ٹیکس لگانے کا طریقہ کار طے کیا جائے۔ وہ قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے تجارت کے اجلاس میں اظہار خیال کر رہے تھے جب انہوں نے کہا کہ ایف بی آر کا کہنا ہے کہ مقامی فروخت پر ٹیکس لگانا مشکل ہے، اس طرح کرنے سے ٹیکس ری فنڈز کے لیے جعلی انوائسز کا کاروبار شروع ہوجائے گا۔

اعبدالرزاق داؤدنے کہاکہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے زیرو ریٹنگ کو ختم کرنے کی مخالفت کی تھی، اگر سیلز ٹیکس واپس ہی کرنا ہے تو پھر لیتے کیوں ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایف بی آر40سال کی خرابیاں 40روز میں ختم کرنے کی کوشش کررہا ہے، ایک دم صفر سے 17فیصد ٹیکس لگانے سے مسائل پیدا ہوں گے۔

(جاری ہے)

مشیر تجارت نے کہا کہ ہم ہمیشہ ریونیو کے پیچھے گئے لیکن صنعتی ترقی کے پیچھے نہیں گئے۔

انہوں نے بتایا کہ عالمی مالیاتی ادارے آئی ایم ایف نے زیروریٹنگ ختم کرنے کا کہا ہے، وزارت خزانہ آئی ایم ایف کو یقین دہانی کراچکی ہے لیکن ایف بی آر نے اس بات کی مخالفت کی تھی۔ دوسری جانب زیراعلیٰ سردار عثمان بزدارکی زیرصدارت پنجاب اسمبلی کے کیفے ٹیریا میں صوبائی کابینہ کا اجلاس منعقد ہوا، جس میں انٹر سٹی ائیر کنڈیشنڈ بسوں پر مجوزہ سیلز ٹیکس واپس لینے کا فیصلہ کیاگیا -کابینہ نے انٹر سٹی ائیر کنڈیشنڈ بسوں پر عائد مجوزہ سیلز ٹیکس واپس لینے کی اتفاق رائے سے منظوری دی-وزیراعلیٰ نے مجوزہ ٹیکس واپس لینے کے حوالے سے فنانس بل میں ضروری ترمیم کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ اس ٹیکس کے واپس لینے سے صوبے کے عوام کو ریلیف ملے گا اور پنجاب حکومت آئندہ بھی عوام کو ریلیف دینے کے لئے مزید اقدامات کرے گی-

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments