رحمان ملک کی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے مودی کے ہیوسٹن ریلی میں شرکت نہ کرنے کی اپیل

گجرات میں مذہبی قتل و غارت کیوجہ سے مودی کا نام امریکہ کے بلیک لسٹ میں تھا، امریکہ پاکستان کی قربانیوں کو نظرانداز کرنے کی بجائے قدر کی نگاہ سے دیکھے،بیان

بدھ ستمبر 00:15

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 17 ستمبر2019ء) پیپلز پارٹی کے رہنما سینیٹر رحمان ملک نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے مودی کے ہیوسٹن ریلی میں شرکت نہ کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہاہے کہ گجرات میں مذہبی قتل و غارت کیوجہ سے مودی کا نام امریکہ کے بلیک لسٹ میں تھا، امریکہ پاکستان کی قربانیوں کو نظرانداز کرنے کی بجائے قدر کی نگاہ سے دیکھے۔

منگل کو ایک بیان میں انہوںنے کہاکہ جب تک نریندر مودی مقبوضہ کشمیر سے کرفیو نہیں ہٹاتا امریکی صدر مودی کی ریلی میں شریک نہ ہو۔انہوںنے کہاکہ مودی نے کشمیر میں کرفیو لگا کر وادی کو ایک جیل میں بدل دیا ہے۔انہوںنے کہاکہ مسلسل کرفیو کیوجہ سے کشمیر میں بچے، بوڑھے و بیمار مر رہے ہیں۔انہوںنے کہاکہ صدر ٹرمپ مودی کے ہوسٹین ریلی میں شرکت کا فیصلہ کرفیو اٹھانے سے مشروط کرے۔

(جاری ہے)

انہوںنے کہاکہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا قد تب اونچا ہوگا اگر مودی کشمیر میں کرفیو ہٹا کر امریکہ پہنچ جائے۔انہوںنے کہاکہ گجرات میں مذہبی قتل و غارت کیوجہ سے مودی کا نام امریکہ کے بلیک لسٹ میں تھا، کئی سالوں تک مودی پر امریکہ جانے پر پابندی تھی۔سینیٹر رحمان ملک نے کہاکہ دھشتگرد مودی اب امریکہ کے آنکھوں کا تارا بن گیا جو امریکی قانون کیخلاف ہے۔سینیٹر رحمان ملک نے کہاکہ دھشتگردی کیخلاف امریکی جنگ میں پاکستان کی قربانیاں دنیا کے ہر ملک سے زائد ہیں۔انہوںنے کہاکہ امریکہ پاکستان کی قربانیوں کو نظرانداز کرنے کی بجائے قدر کی نگاہ سے دیکھے۔انہوںنے کہاکہ بھارتی وزیراعظم کسی ایوارڈ و عزت کا مستحق نہیں، کشمیر میں مظالم کر رہا ہے

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments