پاکستان کا دنیا میں امن، سلامتی اور استحکام کو برقرار رکھنے کیلئے ایک مضبوط میکنزم کے قیام کو یقینی بنانے کے اپنے عزم کا اعادہ

عالمی امن دستوں میں شامل نمایاں ملک کی حیثیت سے پاکستان دنیا کے متعدد شورش زدہ علاقوں میں سلامتی اور استحکام کو برقرار رکھنے میں اقوام متحدہ امن دستوں کے اہم کردار سے بخوبی آگاہ ہے،ہم دنیا بھر سے امن دستوں کی خدمات اور قربانیوں کو سلام پیش کرتے ہیں، پاکستان کو سلامتی کے قیام کیلئے اقوام متحدہ کے ساتھ گزشتہ چھ دہائیوں سے جاری دیرینہ شراکت پر فخر ہے ترجمان دفتر خارجہ کا اقوام متحدہ کے امن دستوں کے عالمی دن کے موقع بیان

ہفتہ مئی 00:02

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 29 مئی2020ء) پاکستان نے دنیا میں امن، سلامتی اور استحکام کو برقرار رکھنے کیلئے ایک مضبوط میکنزم کے قیام کو یقینی بنانے کے اپنے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ عالمی امن دستوں میں شامل نمایاں ملک کی حیثیت سے پاکستان دنیا کے متعدد شورش زدہ علاقوں میں سلامتی اور استحکام کو برقرار رکھنے میں اقوام متحدہ امن دستوں کے اہم کردار سے بخوبی آگاہ ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے جمعہ کو اقوام متحدہ کے امن دستوں کے عالمی دن کے موقع اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ اقوام متحدہ امن دستوں کے عالمی دن منانے میں پاکستان عالمی برادری کے ساتھ ہے۔ ترجمان نے کہا کہ ہم دنیا بھر سے امن دستوں کی خدمات اور قربانیوں کو سلام پیش کرتے ہیں اور امن و استحکام کے قیام میں اقوام متحدہ کے ساتھ تعاون اور ’’نیلے ہیلمٹ‘‘ کے ذریعہ کام کرنے کے اپنے پختہ عزم کا اعادہ کرتے ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ پاکستان کو سلامتی کے قیام کیلئے اقوام متحدہ کے ساتھ گزشتہ چھ دہائیوں سے جاری دیرینہ شراکت پر فخر ہے۔ انہوں نے مزید کہاکہ ہماری امن فوج نے اپنے ہر مشن میں جس میں انہوں نے حصہ لیا اپنی پیشہ وارانہ مہارت اور لگن پر بڑے پیمانے پر پذیرائی حاصل کی ہے۔ ترجمان نے کہا کہ 1960ء سے لے کر اب تک ہمارے 200,000 سے زیادہ فوجی دنیا کے تقریباً تمام براعظموں میں 26 ممالک میں اقوام متحدہ کے 46 مشنز میں عزت اور وقار کے ساتھ خدمات سر انجام دے چکے ہیں، ہمارے بہادر امن دستوں میں سے 157 نے بین الاقوامی امن و سلامتی کیلئے اپنی جانوں کی قربانی دی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے ریکارڈ وقت میں خواتین امن فوجیوں کی تعیناتی میں بھی اہم کردار کیا ہے، ہماری لیڈی پولیس افسر شہزادی گلفام 2011ء میں بین الاقوامی خواتین پولیس پیس کیپر ایوارڈ حاصل کرنے والی پہلی خاتون تھیں۔ دریں اثناء یورپی یونین نے اقوام متحدہ کے امن نمائندے کے طور پر اپنی خدمات انجام دینے والے مردوں اور خواتین کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا۔ یورپی یونین کے پاکستان میں قائم دفتر نے کہا ہے کہ پاکستان اقوام متحدہ کے امن عمل میں کردار ادا کرنے والے ملکوں میں سے ایک ہے اور بالخصوص پاکستانی خواتین کا سرگرم کردار قیام امن میں پاکستان کیلئے باعث فخر ہے۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments