او آئی سی نے پاکستان کی جانب سے پیش کردہ اسلامو فوبیا کے حوالے سے قرار داد متفقہ طور پر منظور کر لی

ہفتہ نومبر 23:44

اسلام آباد۔28نومبر  (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 28نومبر2020ء) :او آئی سی نے پاکستان کی جانب سے پیش کردہ اسلامو فوبیا کے حوالے سے قرار داد  متفقہ طور پر منظور کی ہے جو ایک اہم۔پیشرفت ہے۔دفتر خارجہ کے مطابق یہ قرار داد دنیا کے مختلف حصوں میں اسلامو فوبیا کے بڑھتے ہوئے واقعات کے تناظر میں تیار کی گئی تھی جسے  نائیجر کے دارالحکومت نیامی  میں او آئی سی وزرائے خارجہ کونسل کے 47 ویں اجلاس کے دوران پیش کیا گیا تھا۔

(جاری ہے)

قرارداد میں نسل پرستی اور مذہبی امتیاز اور اسلامو فوبیا کے عروج ، قرآن پاک کی بے حرمتی اور گستاخانہ خاکوں کی دوبارہ اشاعت کے حالیہ واقعات پر بھی گہری تشویش کا اظہار کیا گیا ہے جس نے پوری دنیا میں 1.8 ارب سے زیادہ مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کیا ہے۔ اس قرار داد میں ہر سال 15 مارچ کو " اسلاموفوبیا کے مقابلے کا عالمی دن " کے نام سے منانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔  اس موقع پر وزیرخارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے  کہا کہ قرارداد اربوں مسلمانوں کے جذبات کی عکاس ہے جو دوسرے مذاہب کا احترام کرتے ہیں اور اسلام اور پیغمبر اسلام  کے لئے بھی اسی طرح کے احترام کی توقع کرتے ہیں۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments