آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا منشیات فروشوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کا فیصلہ

منشیات تیار کرنے والے انسانیت کے دشمن اور قومی سلامتی کے لیے خطرہ ہیں، منشیات فروشوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا، چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ کا اینٹی نارکوٹکس فورس ہیڈ کوارٹرز کے دورے کے موقع پراہم اعلان

Danish Ahmad Ansari دانش احمد انصاری بدھ 28 جولائی 2021 00:21

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا منشیات فروشوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹنے ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ، اخبار تازہ ترین، 27جولائی 2021) منشیات تیار کرنے والے انسانیت کے دشمن اور قومی سلامتی کیلئے خطرہ ہیں، آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کا اینٹی نارکوٹکس فورس ہیڈ کوارٹرز کا دورہ، منشیات فروشوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کا اعلان کر دیا- تفصیلات کےمطابق  چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے کہا ہے کہ منشیات تیار کرنے والے قومی سلامتی کے لیے خطرہ ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے یہ بات اینٹی نارکوٹکس فورس (اے این ایف) ہیڈ کوارٹرز کے دورے کے موقع پر کہی۔ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف نے کو اس موقع پر اے این ایف کی کارکردگی سے متعلق تفصیلی بریفنگ دی گئی۔

(جاری ہے)

پاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ نے اس موقع پر کہا کہ منشیات تیار کرنے والے انسانیت کے دشمن اور قومی سلامتی کے لیے خطرہ ہیں۔

آئی ایس پی آر کے مطابق چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اپنے دورے کے دوران کہا کہ منشیات فروشوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔ واضح رہے کہ پاکستان میں منشیات کا استعمال بڑھ رہا ہے، حال ہی میں فیصل آباد میں میڈیکل سٹور پر نشہ آور ادویات فروخت ہونے کا انکشاف ہوا ۔ پولیس اہلکار کاررروائی کرنے کی بجائے رشوت لیتے رہے،پولیس اہلکار کی موجودگی میں بھی میڈیکل سٹور کا مالک نشے کے عادی افراد کو منشیات فروخت کرتا رہا، جس کی فوٹیج بھی سامنے آ ئی تھی ۔

پولیس اہلکار نشہ آور ادویات فروخت کرنے والے میڈیکل اسٹور سے رشوت لینے لگے۔پولیس اہلکار کی رشوت لینے کی فوٹیج بھی سامنے آئی ہے جس میں پولیس اہلکار کو میڈیکل سٹور پر پیسے لیتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔ پولیس اہلکار کی موجودگی میں بھی میڈیکل سٹور کا مالک نشے کے عادی افراد کو منشیات فروخت کرتا رہا۔ میڈیکل سٹورز پر نشہ آور ادویات اور انجیکشن کی فروخت سے کئی سوالیہ نشان کھڑے ہو گئے ہیں۔

جب کہ پولیس اہلکاروں کی جانب سے اس دھندے کی معاونت بہت سے صورت حال تشویشناک ظاہر ہوتی ہے۔بتایا گیا ہے کہ دکاندار منشیات فروشوں کو سرعام نشہ آور ادویات فروخت کرتے ہیں جبکہ پولیس خاموش تماشائی بن کر دیکھتی رہتی ہے کیونکہ انہیں ہر مہینے میڈیکل سٹورز کے مالکان کی جانب سے پیسے ادا کیے جاتے ہیں۔بتایا گیا ہے کہ ایسے سٹورز مالکان کی معاونت کرنے والے پولیس اہلکاروں کے خلاف کارروائی عمل میں لائی گئی ہے۔

جبکہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد صارفین کی جانب سے بھی تشویش کا اظہار کیا گیا ہے۔کیونکہ کھلے عام نشہ آور ادویات کی فروخت سے خاص طور پر نوجوان نسل میں نشہ کرنے کا رجحان بڑھ رہا ہے۔والدین کی جانب سے خصوصی طور پر متعلقہ حکام سے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے سخت کاروائی عمل میں لانے کی درخواست کی گئی ہے۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments