کاروبار اور صنعت میں جدت لانے کیلئے انفارمیشن ٹیکنالوجی کو بروئے کار لانے کی ضرورت ہے،ڈاکٹر عارف علوی

نجی شعبہ معیشت کی ترقی کے ساتھ ساتھ روزگار کی فراہمی میں بھی نمایاں کردار ادا کر سکتا ہے، حکومت نے نوجوانوں اور خواتین کو کاروبار شروع کرنے میں سہولت دینے کیلئے آسان قرضوں کا انتظام کیا ہے ،ملک کے بڑے معاشی اشاریے بہتر ہوئے ہیں، برآمدات میں اضافہ کی ضرورت ہے،ڈاکٹر عارف علوی

منگل 28 ستمبر 2021 23:01

کاروبار اور صنعت میں جدت لانے کیلئے انفارمیشن ٹیکنالوجی کو بروئے کار ..
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 28 ستمبر2021ء) صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کاروبار اور صنعت میں جدت لانے کے لئے انفارمیشن ٹیکنالوجی کو بروئے کار لانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ نجی شعبہ معیشت کی ترقی کے ساتھ ساتھ روزگار کی فراہمی میں بھی نمایاں کردار ادا کر سکتا ہے، حکومت نے نوجوانوں اور خواتین کو کاروبار شروع کرنے میں سہولت دینے کے لئے آسان قرضوں کا انتظام کیا ہے جس کے لئے ان کی رہنمائی کی جانی چاہئے، ملک کے بڑے معاشی اشاریے بہتر ہوئے ہیں، برآمدات میں اضافہ کی ضرورت ہے۔

وہ منگل کو یہاں ایوان صدر میں گوجرانولہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے زیر اہتمام ہیروز آف گوجرانولہ ایوارڈز تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر صدر گوجرانوالہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری عمر اشرف مغل نے بھی تقریب سے خطاب کیا۔

(جاری ہے)

تقریب میں غیر ملکی سفارتکاروں، گوجرانولہ چیمبر کے ارکان، مخیر حضرات اور دیگر نمایاں شخصیات نے شرکت کی۔

صدر مملکت نے گوجرانولہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے تجارت و کاروبار کے ساتھ ساتھ فلاحی کاموں کو سراہتے ہوئے کہا کہ پاکستانی قوم صدقہ خیرات کرنے کے حوالے سے بے مثال ہے، ملک میں اسی جذبے کے ساتھ ٹیکس چوری اور بددیانتی جیسی برائیوں کو روکنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے ملکی برآمدات کے فروغ کے لئے مصنوعات کی ویلیو ایڈیشن پر زور دیتے ہوئے کہا کہ کاروبار اور صنعت میں جدیدیت پر سرمایہ کاری کی جانی چاہئے، اس حوالے سے انفارمیشن ٹیکنالوجی کو بروئے کار لانے سے خود اپنا فائدہ ہوگا۔

صدر مملکت نے کہا کہ حکومت نے کامیاب جوان پروگرام کے تحت نوجوانوں کو اپنا کاروبار شروع کرنے کے لئے آسان قرضوں کی سہولت کے لئے ایک سو ارب روپے مختص کئے ہیں۔ اسی طرح خواتین کے لئے بھی آسان قرضوں کی سہولت فراہم کی گئی ہے تاہم ان سہولیات سے استفادہ کرنے کے لئے انہیں رہنمائی کی ضرورت ہے، اس حوالے سے چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کو کردار ادا کرنا چاہئے۔

صدر مملکت نے کہا کہ خصوصی افراد بھی ذہنی صلاحیتوں کے اعتبار سے کسی سے کم نہیں، ان کی مناسب تعلیم و تربیت کے ساتھ حوصلہ افزائی کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ معاشرے کے تمام طبقات کی شمولیت کے بغیر اجتماعی ترقی ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان بہترین حکمت عملی سے کورونا وبا سے نمٹنے میں کامیاب رہا، اس مشکل وقت میں معاشرے کے کمزور طبقات کے لئے ہمدردی کا احساس اس حکمت عملی کا اہم جزو رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ 4 دہائیوں سے پاکستان کی جانب سے لاکھوں افغان مہاجرین کی میزبانی پوری دنیا کے لئے مثال ہے۔ قبل ازیں صدر گوجرانوالہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری عمر اشرف مغل نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تقریب کا مقصد گوجرانوالہ کے ہیروز کو سراہنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گوجرانوالہ پاکستان کی برآمدات اور ترقی میں نمایاں کردار ادا کررہا ہے۔

انہوں نے کاروباری برادری کے ساتھ مسلسل روابط رکھنے اور مشاورت پر حکومت کو سراہا۔ عمر اشرف مغل نے کہا کہ گوجرانوالہ ٹیکس ادا کرنے والا پاکستان کا آٹھواں بڑا شہر ہے اور سمال اینڈ میڈیم انٹرپرائز کا بڑا حب ہے، اس بات پر فخر ہے۔ موجودہ حکومت نے گوجرانوالہ کیلئے میگا پروجیکٹس کا اعلان کیا ہے جس میں موٹروے، انڈسٹریل اسٹیٹ اور ہسپتالوں کا قیام شامل ہے۔ تقریب میں گوجرانولہ کی تعمیر و ترقی اور فلاح و بہبود کے لئے مختلف شعبوں میں گراں قدر خدمات سر انجام دینے والی شخصیات میں ایوارڈز تقسیم کئے گئے۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments