عالمی سطح پر اشیاء مہنگی ہونے کے باعث مہنگائی نیچے نہیں جائے گی،شوکت ترین

دنیا میں کورونا کے اثرات کم ہونے کے ساتھ مہنگائی نیچے آئے گی، 40 فیصد آبادی کوآٹا، چینی دالوں پر ٹارگٹڈ سبسڈی دیں گے۔ وفاقی وزیرخزانہ کی گفتگو

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ ہفتہ 16 اکتوبر 2021 18:32

عالمی سطح پر اشیاء مہنگی ہونے کے باعث مہنگائی نیچے نہیں جائے گی،شوکت ترین
اسلام آباد (اُردوپوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 16اکتوبر2021ء) وفاقی وزیرخزانہ شوکت ترین نے کہا ہے کہ عالمی سطح پر اشیاء مہنگی ہونے کے باعث مہنگائی نیچے نہیں جائے گی، دنیا میں کورونا کے اثرات کم ہونے کے ساتھ مہنگائی نیچے آئے گی، کم آمدنی والوں کا ڈیٹا بیس موجود ہے، 40 فیصد آبادی کو ٹارگٹڈ سبسڈی دیں گے۔ انہوں نے واشنگٹن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ عالمی سطح پر اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ ہورہا ہے، اس لیے مہنگائی نیچے نہیں جائے گی، مہنگائی تب نیچے آئے گی جب دنیا میں کورونا کے اثرات کم ہوں گے۔

انہوں نے کہا کہ کم آمدنی والوں کا ہمارے پاس ڈیٹا بیس آگیا ہے، ملک کی40 فیصد آبادی کو آٹا، چینی اور دالوں پر ٹارگٹڈ سبسڈی دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اگلے 4 سے 5 سال میں ٹیکس ٹو جی ڈی پی شرح 20 فیصد تک لے کر جائیں گئے، توانائی سیکٹر کے لیے معاہدے ہو چکے ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) سے ایک ارب ڈالر ملنے کی توقع ہے،آئی ایم ایف کو اعدادوشمار دے دیے ہیں وہ آئندہ دو چار روز میں توثیق کریں گے۔

امریکی نائب معاون وزیرخارجہ سے ملاقات میں کہا ہے کہ غلطیاں دونوں اطراف سے ہوئیں، اب آگے بڑھنا چاہیے۔ دوسری جانب ملک میں مہنگائی کا سونامی تھمنے کا نام نہیں لے رہا، غریبوں اور متوسط طبقات کا دو وقت کی روٹی کھانا، ادویات اور سکولوں کی فیس کے پیسے پورے کرنا محال ہوگیا ہے، پیٹرول ، بجلی اور یوٹیلیٹی اسٹور میں اشیاء کی قیمتوں میں اضافے کے بعد اوپن مارکیٹ میں بھی درجہ دوم کا گھی اور خوردنی تیل مہنگا کردیا گیا ہے۔

درجہ دوم کا گھی 5 روپے فی کلو اور درجہ دوم کا کوکنگ آئل 15 روپے لیٹر تک مہنگا کر دیا گیا ہے۔ درجہ دوم کے گھی کی نئی قیمت 325 روپے سےبڑھ کر 330 روپے فی کلو اور خوردنی تیل 325 روپے سے بڑھ کر 340 روپے فی لیٹر ہوگئی ہے۔ گزشتہ روز حکومت نے درجہ اول کا گھی 38 روپے اور درجہ اول کا خوردنی تیل 48 روپے لیٹر تک مہنگا کیا، جس کے بعد قیمت 361 روپے سے بڑھا کر 409 روپے فی لیٹر کردی گئی ہے۔

درجہ دوم کا گھی اور کوکنگ آئل مہنگا ہونے سے غریب اور متوسط طبقات براہ راست متاثر ہوں گے۔دوسری جانب یوٹیلٹی اسٹورز پر بھی ایک بار پھر مختلف اشیاء کی قیمتوں میں ہوشربا اضافہ کردیا گیا، مختلف برانڈز کا گھی 15 سے 49 روپے فی کلو مہنگا کردیا گیا، مختلف برانڈز کے کوکنگ آئل 14 سے 110 روپے فی لیٹر تک مہنگا کردیا گیا۔ کپڑے دھونے کے 2 کلو پاؤڈر کی قیمت میں 10 سے21 روپے، جوتے چمکانے والی 42 ملی گرام پالش10 روپے، شیمپو کی 180 ملی لیٹر قیمت میں 4 روپے کا اضافہ کردیا گیا۔ ہینڈ واش کی 228 ملی لیٹر قیمت میں 9 روپے، شربت کی 800 ملی لیٹر قیمت میں 40 روپے،اچار کی 300 گرام قیمت 20 سے 44 روپے تک بڑھا دی گئی ہے۔ 

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments