وزیراعظم عمران خان نے منی لانڈررز کو نکیل ڈالنے کے ساتھ گرے لسٹ سے نکلنے کیلئے بہترین اقدامات کئے، شہبازگل

ضی کے حکمران منی لانڈرنگ کے خلاف اقدامات کے بجائے خود اس میں ملوث رہے، آئی ایم ایف سے قرض پر قرض لے لے کر ذاتی جیبیں بھری گئیں، مریم اورنگزیب کو جواب

پیر 25 اکتوبر 2021 23:52

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 25 اکتوبر2021ء) وزیراعظم کے ترجمان و معاونخصوصی برائے سیاسی ابلاغ ڈاکٹر شہباز گل نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے منی لانڈررز کو نکیل ڈالنے کے ساتھ گرے لسٹ سے نکلنے کیلئے بہترین اقدامات کئے، ماضی کے حکمران منی لانڈرنگ کے خلاف اقدامات کے بجائے خود اس میں ملوث رہے، آئی ایم ایف سے قرض پر قرض لے لے کر ذاتی جیبیں بھری گئیں۔

پیر کو مریم اورنگزیب کے بیان پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے منی لانڈررز کو نکیل ڈالنے کے ساتھ گرے لسٹ سے نکلنے کیلئے بہترین اقدامات کئے۔ انہوں نے کہا کہ فیٹف نے اعتراف کیا کہ پاکستان نے 34 میں سے 30 نکات پر وسیع طور پر عملدر آمد کر لیا ہے، فیٹف سربراہ نے گرے لسٹ سے نکلنے کیلئے حکومتی عزم کا بھی اعتراف کیا ہے۔

(جاری ہے)

ڈاکٹر شہباز گِل نے کہا کہ ملک منی لانڈرنگ اور کالے دھن کو کنٹرول نہ کرنے کے جرم میں گرے لسٹ میں گیا، ماضی کے حکمران منی لانڈرنگ کے خلاف اقدامات کی بجائے خود اس میں ملوث رہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کے ہوتے ہوئے ہی فیٹف سے نکلنے کی امید پیدا ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ میاں مفرور گرے لسٹ میں جانے کا باعث بنے، آئی ایم ایف سے قرض پر قرض لے لے کر ذاتی جیبیں بھری گئیں۔ انہوں نے کہا کہ معیشت کے جعلی ارسطوں نے معیشت کے ساتھ ساتھ ملک کا بھی دیوالیہ نکالا۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments