گردشی قرضوں کی رفتار450 سے کم ہو کر150 ارب پر آگئی ہے، حماد اظہر

بجلی ٹیرف بڑھنے کی وجہ بجلی گھروں کے کرائے بڑھ رہے ہیں، گیس کے بحران کا تعلق ایل این جی کی خرید سے نہیں ہے، آئندہ چند سالوں میں لوکل گیس ختم ہوجائے گی۔ وفاقی وزیر توانائی کی گفتگو

sanaullah nagra ثنااللہ ناگرہ ہفتہ 27 نومبر 2021 18:48

گردشی قرضوں کی رفتار450 سے کم ہو کر150 ارب پر آگئی ہے، حماد اظہر
اسلام آباد (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 نومبر 2021ء) وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر نے کہا ہے کہ گیس کے بحران کا تعلق ایل این جی کی خرید سے نہیں ہے، آئندہ چند سالوں میں لوکل گیس ختم ہوجائے گی، بجلی ٹیرف بڑھنے کی وجہ بجلی گھروں کے کرائے بڑھ رہے ہیں، گردشی قرضوں کی رفتار450 سے کم ہو کر150 ارب پر آگئی ہے۔ انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ حکومت  نئے پلان کے تحت  تب ہی بجلی خریدے گی جب ہمیں ضرورت ہوگی، بغیر ضرورت بجلی نہیں خریدیں گے، ڈیموں کی تعمیر پر تیزی سے کام ہو رہا ہے۔

حماد اظہر نے کہا کہ سالانہ 800 ارب روپے بجلی گھروں کو کرایہ دے رہے ہیں، گردشی قرضوں کی رفتار ساڑھے 400 سے کم ہو کر 150 ارب پر آگئی ہے، 80 فیصد گردشی قرضہ بجلی گھروں کے کرایہ کی وجہ سے ہے، بجلی ٹیرف اس لیے بڑھ رہا ہے کیونکہ بجلی گھروں کے کرائے بڑھ رہے ہیں، بجلی گھروں سے کیے گئے معاہدوں کو ہم دوبارہ دیکھ رہے ہیں، ماضی میں ضرورت سے زیادہ مہنگی قیمتوں پر بجلی گھروں سے معاہدے کیے گئے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ گیس کے بحران کا تعلق ایل این  جی کی خرید سے نہیں ہے، آئندہ چند سالوں میں لوکل گیس ختم ہوجائے گی۔ دوسری جانب ترجمان سوئی ناردرن گیس کمپنی نے صارفین کی جانب سے گیس کی بندش اور گیس پریشر کم ہونے کی شکایات پر اپنے بیان میں کہا کہ سردی کی وجہ سے گیس کی طلب بڑھ گئی ہے، اس کے باوجود سب سیکٹرز کو گیس کی ترسیل جاری ہے۔ شہر میں گیس لوڈشیڈنگ نہیں کی جارہی، شہر میں گھریلو صارفین کو بھی گیس کی سپلائی جاری ہے، گھریلو صارفین کیلئے گیس کی بندش کا کوئی شیڈول جاری نہیں کیا، شہر میں بوسیدہ پائپ لائنز کی بحالی کا کام جاری ہے جس کی وجہ سے ٹیل اینڈ صارفین کو گیس سپلائی میں مشکل آسکتی ہے۔

اسی طرح شہر کے مختلف علاقوں میں صارفین نے گیس کی بندش اور گیس پریشر کم ہونے کی شکایات کی ہیں۔ 

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments