وزیراعظم عمران خان نے انا رکلی دھماکے کی رپورٹ طلب کر لی

دھماکے کے ذمہ داروں کو فوری گرفتار کر کے قانون کے کٹہرے میں لایا جائے‘ عمران خان ،دیگر شخصیات کی بھی مذمت

جمعرات 20 جنوری 2022 23:56

وزیراعظم عمران خان نے انا رکلی دھماکے کی رپورٹ طلب کر لی
اسلام آباد/لاہور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 20 جنوری2022ء) وزیراعظم عمران خان نے انار کلی دھماکے کا نوٹس لیتے ہوئے پنجاب حکومت سے ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ طلب کر لی ہے۔دوسری جانب وزیر اعظم سمیت دیگر شخصیات نے بم دھماکے میں انسانی جانوں کے ضیاع اور متعدد افراد کے زخمی ہونے پر افسوس کا اظہار کیا ہے ۔ وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ عمران خان نے کہا کہ انارکلی دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہیں، دھماکے کے ذمہ داروں کو فوری گرفتار کر کے قانون کے کٹہرے میں لایا جائے۔

وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا کہ دھماکا امن و امان کی فضا ء کو سبوتاژ کرنے کی مذموم کارروائی ہے،دھماکے کے ذمہ دار قانون کی گرفت سے نہیں بچ پائیں گے۔ دھماکے میں جاں بحق افراد کے اہل خانہ کے دکھ اور درد میں برابر کے شریک ہیں۔

(جاری ہے)

زخمیوں کو بہترین طبی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایات دی ہیں۔وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چودھری نے لاہور دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ انسانی جانوں کا ضیاع افسوسناک ہے،فواد چوہدری نے دھماکے میں جاں بحق افراد کے اہل خانہ سے ہمدردی کا اظہار کیا اور زخمی افراد کی جلد صحت یابی کی دعا کی۔

وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے اپنے بیان میں کہا کہ انارکلی دھماکے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتا ہوں، دھماکے سے انسانی جانوں کے ضیاع پر انتہائی دکھ ہوا۔ زخمی ہونے والے افراد کی جلد صحتیابی کے لئے دعاگو ہوں۔ پنجاب حکومت سے انارکلی دھماکے کی رپورٹ طلب کی ہے۔پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری نے لاہور میں بم دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین سے افسوس کا اظہار کیا۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت زخمیوں کے فوری بہتر علاج و معالجے کے لئے اقدامات کرے، اسلام آباد میں پولیس افسران کی شہادت کے بعد انارکلی میں دھماکا تشویش ناک ہے، ڈیرہ اسماعیل خان میں 3 افراد کی ٹارگٹ کلنگ میں ہلاکت ہوئی، ملک میں دہشت گردی کا عفریت قابو سے باہر ہوتا جارہا ہے، عمران خان میں وہ اہلیت نہیں کہ کسی بحران کو حل کرسکیں۔سابق صدر مملکت آصف علی زرداری نے لاہور میں دھماکے کی مذمت اور جاں بحق افراد کے لواحقین سے ہمدردی، افسوس کا اظہار کرتے ہوئے زخمیوں کی جلد صحت یابی کیلئے دعا کی۔

انہوں نے کہا کہ حکومت دہشتگردوں اور منصوبہ سازوں کو قانون کی گرفت میں لائے۔مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے کہا کہ انار کلی بازار جیسے پر ہجوم اور مصروف ترین علاقہ میں دھماکہ نہایت افسوسناک اور تشویشناک واقعہ ہے،جاں بحق افراد کے اہل خانہ سے اظہار تعزیت اور زخمیوں کی جلد صحتیابی کیلئے دعا گو ہیں ، اللہ تعالیٰ پاکستان پر رحم فرمائے۔

مسلم لیگ کے صدر چودھری شجاعت حسین اور سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویز الٰہی نے لاہور انارکلی دھماکے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پرامن شہر کا امن خراب کرنے والوں کو فوری طور پر گرفتار کر کے قرار واقعی سزا دی جائے۔انہوں نے کہا کہ زخمیوں کو فوری طور پر بہترین طبی امداد دی جائے۔جمعیت علمائے اسلام (ر) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے انارکلی بم دھماکے کی مذمت کی اور جاں بحق افراد کے لواحقین سے اظہار تعزیت کیا۔

انہوں نے کہا کہ انارکلی بازار میں دھماکے کا سن کر بے حد افسوس ہوا، انارکلی دھماکے سے صوبائی حکومت اور انتظامیہ کی نا اہلی کھل کر سامنے آگئی ہے، صوبائی حکومت شہریوں کو تحفظ دینے میں ناکام ہوگئی ہے، جمعیت علما ئے اسلام کے رضا کار زخمیوں کو خون کے عطیات فراہم کریں۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments