پی ٹی ایم اور ٹی ایل پی سمیت سب سے بات کرنے کو تیار ہوں،وزیراعظم کا اعلان

سب سے بات کروں گا لیکن چوروں سے بات نہیں کروں گا، مجرموں سے بات کرنا ملک اور اللہ سے غداری ہو گی، وزیراعظم عمران خان کا بیان

Danish Ahmad Ansari دانش احمد انصاری اتوار 23 جنوری 2022 20:38

پی ٹی ایم اور ٹی ایل پی سمیت سب سے بات کرنے کو تیار ہوں،وزیراعظم کا اعلان
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ، اخبار تازہ ترین، 23 جنوری 2022) وزیراعظم عمران خان نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ پی ٹی ایم اور ٹی ایل پی سمیت سب سے بات کرنے کو تیار ہوں، لیکن چوروں سے بات نہیں کروں گا، مجرموں سے بات کرنا ملک اور اللہ سے غداری ہو گی۔تفصیلات کے مطابقوزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ میں سب کو ساتھ لے کر چلنے کے لیے تیار ہوں، سب سے بات کرنے کو تیار ہوں۔

انہوں نے کہا کہ میں پی ٹی ایم اور ٹی ایل پی سے بھی بات کرنے کو تیار ہوں لیکن ان چوروں سے نہیں۔وزیراعظم عمران خان نے لائیو کالز کے دوران عوام الناس کی جانب سے پوچھے جانے والے سوال کے جواب میں کہا کہ پی ٹی ایم اور ٹی ایل پی سے بھی بات کرنے کو تیار ہوں لیکن مجرموں سے بات کروں گا تو اس ملک اور اللہ سے غداری کروں گا۔

(جاری ہے)

وزیراعظم نے واضح طور پر کہا کہ عمران خان جادو کا ڈنڈا ہلا کر ملک کو سیدھا نہیں کر سکتا ہے۔

اسی دوران عمران خان نے ایک مثال دیتے ہوئے کہا کہ سنگا پور کا وزیر کرپشن پر پکڑا گیا تو اس نے خود کشی کرلی کیوں کہ اسے پتہ تھا کہ معاشرے میں اب کوئی جگہ نہیں ہے۔واضح رہے کہ آج اتوار کے روز وزیراعظم عمران خان نے براہ راست عوام کی ٹیلی فون کالز سنیں اور مختلف سوالات کے جوابات دیے۔اس دوران خاتون نے وزیراعظم سے سوال کیا کہ مہنگائی بہت ہوگئی ہے، سال میں مہنگائی ڈبل ہوگئی ہے اور شاید آپ کو اصل صورتحال نہیں بتائی جاتی، اب ہمیں بتادیں کہ کیا ہم تھوڑا سا گھبرالیں؟ اس کے جواب میں وزیر اعظم کا کہنا تھاکہ ایک گھنٹے میں اپنے موبائل پر ساری معلومات مل جاتی ہے کہ کہاں کتنی مہنگائی ہے لیکن بدقسمتی ہے کہ مایوسی پھیلائی جارہی ہے۔

آپ مایوس نہ ہوں۔انہوں نے کہا کہ تسلیم کرتا ہوں دنیا میں مہنگائی ہے، مہنگائی صرف پاکستان کا مسئلہ نہیں، تنخواہ دار طبقہ مشکل میں ہے لیکن پوری کوشش ہے ان کی مدد کریں۔ایک اور سوال کے جواب میں وزیراعظم کا کہنا تھاکہ ہیلتھ کارڈ پرشہباز شریف ہیرو بن رہے ہیں، آپ کی ٹیم کیوں نہیں بتاتی؟ یہ لوگ تھوڑی دیر کیلئے ہی لوگوں کو پاگل بناسکتےہیں، زيادہ دیر کے لیے نہیں۔

عمران خان سے شہریوں نے یہ سوال بھی کیے کہ موبائل پر ٹیکس کیوں بڑھادیا۔اس دوران وزیر اعظم نے معیشت اور ملکی سیاست پر بھی بات کی۔ انہوں نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ انتظار کررہاہوں آپ پاکستان آئيں، بڑی باتیں ہورہی ہیں کہ ڈيل ہوگئی، کہتے ہیں آج آجائے گا کل آجائے گا۔انہوں نے کہا کہ میں تو دعا کرتا ہوں کہ لندن سے آج آجائیں لیکن وہ واپس نہیں آنے لگا، سارا ٹبّر باہر بھاگا ہوا ہے، کوئی پولوکھیل رہا ہے تو کوئی مہنگی گاڑیوں میں گھوم رہے رہا ہا، اتنا پیسہ تو برطانیہ کی رائل فیملی نہیں خرچ کرسکتی۔

وزیراعظم کا کہنا تھاکہ تین بار وزیراعظم رہنے والا کہتا ہے کہ اس کے بیٹے پاکستان کے شہری نہیں۔اس دوران عمران خان نے اپوزیشن کو خبردار کیا کہ ہماری پارٹی حکومت کی یہ مدت اورآئندہ مدت بھی پوری کرے گی۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments