انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے خادم رضوی اور افضل قادری سمیت دیگر ملزمان کو اشتہاری قرار دے دیا

منگل اپریل 19:52

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 03 اپریل2018ء) انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے تحریک لبیک کے سربراہ خادم رضوی اور پیر افضل قادری سمیت دیگر ملزمان کو اشتہاری ملزم قرار دے دیا ہے ۔منگل کو عدالت نے فیض آباد دھرنا کیس کی سماعت کی تو اس موقع پر عدالت کے طلب کیے جانے کے باوجود عدم حاضری پر تحریک لبیک کے خادم حسین رضوی اور پیر افضل قادری سمیت دیگر ملزمان کو اشتہاری قرار دے دیاہے۔

(جاری ہے)

عدالت نے مولاناعنایت اللہ اور شیخ اظہر کو بھی عدم حاضری پر اشتہاری قرار دیا ہے۔عدالت نے خادم حسین رضوی اور دیگر کو تھانہ آبپارہ میں درج مقدمات میں اشتہاری قرار دیا۔عدالتی حکم پر خادم حسین رضوی کی طلبی کے اشتہار چسپاں کردئیے گئے جو تھانہ نواں کوٹ ان کے آبائی علاقے اور عدالت کے باہر لگائے گئے ہیں۔ پولیس نے اس حوالے سے اپنی رپورٹ عدالت میں جمع کرادی۔واضح رہے کہ گزشتہ سال نومبر میں اسلام آباد کے علاقے فیض آباد پر تحریک لبیک کی جانب سے دھرنا دیا گیا جو تقریباً 22 روز بعد ختم ہوا جب کہ اس دوران توڑ پھوڑ اور پولیس اہلکاروں پر حملے کے مقدمات بھی درج کیے گئے۔

متعلقہ عنوان :

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments