اُردو پوائنٹ پاکستان اسلام آباداسلام آباد کی خبریںنواز شریف 2018کے الیکشن کے بعد واپس آرہا ہے، روک سکو تو روک لو،کیپٹن ..

نواز شریف 2018کے الیکشن کے بعد واپس آرہا ہے، روک سکو تو روک لو،کیپٹن (ر)صفدر

, عمرآ ن خان جتنا چاہے کچرا اکٹھاکرلیں ان کو وزارت عظمیٰ نہیںملنے والی،امپائر کوشش کر رہے ہیں کہ عوام کو کسی طرح عمران خان کے ساتھ کھڑا کیا جائے لیکن عوام ان کی کوششوں کو ناکام بنا دیں گے، اگر اس پارلیمان نے امپائر کے اشاروں کو توثیق نہ دینے کا تہیہ کر لیا تو پھر آئندہ بھی جمہوریت چلتی رہے گی،بڑی مشکل تک ہم اس ملک کو 2018کے انتخابات تک لیکر آئے ہیںآگے اب عوام فیصلہ کریں کہ وہ کیا چاہتے ہیں , پاکستان مسلم لیگ(ن) کے رکن قومی اسمبلی کی پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا سے گفتگو

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 مئی2018ء) پاکستان مسلم لیگ(ن) کے رکن قومی اسمبلی کیپٹن (ر)صفدر نے کہا ہے کہ نواز شریف 2018کے الیکشن کے بعد واپس آرہا ہے، روک سکو تو روک لو،عمرآ ن خان جتنا چاہے کچرا اکٹھاکرلیں ان کو وزارت عظمیٰ نہیںملنے والی،امپائر کوشش کر رہے ہیں کہ عوام کو کسی طرح عمران خان کے ساتھ کھڑا کیا جائے لیکن عوام ان کی کوششوں کو ناکام بنا دیں گے، اگر اس پارلیمان نے امپائر کے اشاروں کو توثیق نہ دینے کا تہیہ کر لیا تو پھر آئندہ بھی جمہوریت چلتی رہے گی،بڑی مشکل تک ہم اس ملک کو 2018کے انتخابات تک لیکر آئے ہیںآگے اب عوام فیصلہ کریں کہ وہ کیا چاہتے ہیں۔

وہ جمعرات کو پارلیمنٹ ہائوس کے باہر میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان ساری پارٹیوں کے اندر سے جتنا چاہے کچرا اکٹھاکرلیں ان کو وزارت عظمیٰ نہیںملنے والی۔

(خبر جاری ہے)

پاکستان میں جمہوری عمل اب مضبوط ہوچکا ہے اور عوام میں شعور اورآگہی آچکی ہے اس لیے ووٹ عوام کی ہے اور اب عوام ہی اپنے ووٹ سے آئندہ انتخابات میں ٖفیصلہ کریں گے کہ آئندہ حکومت کون کرے گا۔

امپائر کوشش کر رہے ہیں کہ عوام کو کسی طرح عمران خان کے ساتھ کھڑا کیا جائے لیکن عوام ین کی کوششوں کو ناکام بنا دیں گے۔ پارلیمنٹ اب بتدریج مضبوط ہورہی ہے، اگر اس پارلیمان نے امپائر کے اشاروں کو توثیق نہ دینے کا تہیہ کر لے تو پھر آئندہ بھی جمہوریت چلتی رہے گی۔70سال کی تاریخ میں ان 5سالوں میں پاکستان نے مثالی ترقی اور خوشحالی دیکھی ہے۔

ہمارے خلاف سازشیں بھی ہو رہی تھیں اور ہم عوام کی خدمت بھی کر رہے تھے۔ بڑی مشکل تک ہم اس ملک کو 2018کے انتخابات تک لیکر آئے ہیںآگے اب عوام فیصلہ کریں کی وہ کیا چاہتے ہیں۔نواز شریف کا بیانیہ عوام میں تیزی سے مقبول ہورہا ہے جس سے مخالفین خائف ہیں اور سازشیں کر رہے ہیں کہ عوام کو نواز شریف سے کس طرح متنفر کیا جائے۔ نواز شرہف 2018کے الیکشن کے بعد واپس آرہا ہے، روک سکو تو روک لو۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

اسلام آباد شہر کی مزید خبریں