(سپورٹس نیوز )

u قومی کرکٹ ٹیم میں واپسی کے لئے پر امید ہیں، اکمل برادران ٴ ڈومیسٹک کرکٹ میں پرفارمنس اچھی بنا رہے ہیں،ر پرفارمنس کی بنا پر ہی قومی ٹیم میں دوبارہ آئیں گے ةپہلے قومی ٹیم کے کوچز کا رویہ ہمارے ساتھ ٹھیک نہیں تھا، اب مصباح الحق سمیت اچھے کوچز آئے ہیں o مصباح الحق نے ہمیں بلا کر قومی ٹیم کی ضرورت کے حوالے سے آگاہ کیا، ہم ان کی امیدوں پرپورا اترنے کی کوشش کریں گے اور قومی ٹیم کے مستقل رکن بنیں گے،کامران اکمل اور عمر اکمل کا انٹرویو

اتوار دسمبر 19:08

{اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 08 دسمبر2019ء) پاکستان کرکٹ کے نامور کھلاڑی اور بھائیوں کی جوڑی کامران اکمل اور عمر اکمل نے کہا ہے کہ وہ قومی کرکٹ ٹیم میں واپسی کے لئے پر امید ہیں، ڈومیسٹک کرکٹ میں پرفارمنس اچھی بنا رہے ہیں اور پرفارمنس کی بنا پر ہی قومی ٹیم میں دوبارہ آئیں گے، پہلے قومی ٹیم کے کوچز کا رویہ ہمارے ساتھ ٹھیک نہیں تھا، اب مصباح الحق سمیت اچھے کوچز آئے ہیں، مصباح الحق نے ہمیں بلا کر قومی ٹیم کی ضرورت کے حوالے سے آگاہ کیا، ہم ان کی امیدوں پرپورا اترنے کی کوشش کریں گے اور قومی ٹیم کے مستقل رکن بنیں گے۔

ایک انٹرویو میں عمر اکمل نے کہا کہ کامران میرے لئے کوچ بھی ہیں اور ٹرینر بھی ہیں اس کے علاوہ دوست بھی ہیں اور ہم ایک دوسرے کے بہت قریب ہیں۔

(جاری ہے)

اس پر کامران نے کہا کہ میں اپنی اور عمر اکمل کی فٹنس پر کبھی سمجھوتہ نہیں کرتا دوست بھی آتے جاتے رہتے ہیں لیکن جب ٹریننگ کا ٹائم ہو اس وقت صرف ٹریننگ ہی ہوتی ہے اس سال عمر اکمل نے بہت محنت کی ہے، اکیڈمی بھی جاتا ہے، اس کو میں نے ڈھیلا نہیں چھوڑنا اس کو چھ سات سال مزید کرکٹ کھیلنا ہو گی۔

اس موقع پر عمر اکمل نے کہا کہ کامران نے مجھے بہت تیاری کروائی ہے اس کے علاوہ مصباح الحق نے مجھے بلا کر ٹیم کی جو ڈیمانڈ تھی وہ بتائی ہے جس پر میں ان کا بھی شکریہ ادا کرتا ہوں اور میری کوشش ہے ٹیم میں واپسی ہو اور میرٹ پر واپسی ہو گی۔ کامران اکمل نے کہا کہ جس طرح عمر اکمل نے محنت کی ہے مجھے امید ہے کہ اس کی ٹی ٹوئنٹی اور ون ڈے میں واپسی جلد ہو گی۔

عمر اکمل نے کہاکہ میرا فوکس فرسٹ کلاس کرکٹ پر ہے اگر اللہ تعالیٰ نے موقع دیا تو پی ایس ایل میں کھیلوں گا اس کے علاوہ اگر میں یہاں پر اچھا پرفارم کروں گا تو ٹی ٹوئنٹی کپ میں جگہ بنا پائوں گا مجھے پہلے یہاں پرفارم کرنا ہو گا۔ کامران اکمل نے کہاکہ جو کھلاڑی دو تین ورلڈکپ کھیلا ہو، ٹیسٹ کرکٹ میں بھی اچھا پرفارم کرتا رہا ہوں اگر اس کو کچھ دیر کے لئے ٹیم سے باہر رہنا پڑے تو وہ واپس ٹیم میں ڈومیسٹک کرکٹ میں اچھی پرفارمنس دکھا کر آ سکتا ہے۔

ایک دو سنچریز کرے اور کچھ ففٹی کرے تو وہ ٹیم میں واپس آ سکتا ہے ماضی میں کوچز کے رویے ٹھیک نہیں تھے اب اچھے کوچز آئے ہیں اور ہم ان سے سیکھنے کے لئے پرامید ہیں اور نئے کوچز آنے سے ہمیں ٹیسٹ میچوں میں موقع ملے گا اور ہم اس کے لئے پرامید ہیں۔ ٹی ٹوئنٹی میں بھی اگر ہماری جگہ بنتی ہے تو ہمیں ان میں بھی موقع ملنا چاہئے۔ انہوں نے کہاکہ گوتم گھمبیر سے لڑائی غلط فہمی تھی۔ میڈیا نے ہمیں ہمیشہ سپورٹ کیا ہے سوشل میڈیا پر ہمارے خلاف پروپیگنڈا کچھ زیادہ کیا جاتا ہے۔ عمر اکمل نے کہا کہ مجھے امید ہے کہ میں ٹیم میں واپس جائوں گا اور اپنی پرفارمنس کے ذریعے ہی جائوں گا اس کیلئے میں ڈومیسٹک پرفارمنس پر بھرپور توجہ دے رہا ہوں۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments