بلوچستان سے نکلنے والی گیس سے سندھ پنجاب میں فیکٹریاں چل رہی ہیں یہاں غریب عوام کو پیٹ پالنے کی خاطر چولہہ جلانے کیلئے بھی گیس میسر نہیں ،سیاسی وسماجی رہنماء

ہفتہ اکتوبر 20:48

اوستہ محمد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 24 اکتوبر2020ء) بلوچستان سے نکلنے والی گیس سے سندھ پنجاب میں فیکٹریاں چل رہی ہیں مگر بلوچستان کی غریب عوام کو پیٹ پالنے کی خاطر چولہہ جلانے کیلئے بھی گیس میسر نہیں ہے سوئی سدرن گیس کمپنی اوستہ محمد انتظامیہ کی جانب سے گیس فراہم نہیں کیا جارہاہے مگر ہر ماہ ناجائز بل تھما دیئے جاتے ہیں یعقوب محلہ اوستہ محمد کے سیاسی وسماجی شخصیت رئیس محمد جان پلال ۔

ریاض حسین جمالی۔ غلارسول پلال اور سا بق کونسلر کریم داد پلال ودیگر نے اپنے محلہ میں سوئی سدرن گیس کمپنی اوستہ محمد انتظامیہ کے خلاف گیس فراہم نہ کرنے کے اہم ایشو پر احتجاج کرتے ہوئیاوستہ محمد پریس کلب رجسٹرڈ کے صحافیوں کو اپنی روداد سناتے ہو ئے کہا کہ اوستہ محمد کی عوام آج بھی زندگی کی تمام بنیادی سہولیات سے محروم ہیں بلوچستان سے نکلنے والی گیس سے بلوچستان کے اکثر شہر گیس کی نعمت سے محروم ہیں انہوں نے کہا کہ بلوچستان اس وقت کے وزیراعلی مرحوم میر تاج محمد خان جمالی تھے اس کے دور میں اوستہ محمد ودیگر شہروں کو گیس کی منظوری ہوئی اور عوام کو گیس کی سہولیات دیا گیا تھا لیکن بدقسمتی سے کہنا پڑتا ہے کہ شہر کے مختلف محلوں جن میں حسین آباد محمد یعقوب محلہ قربان کالونی۔

(جاری ہے)

جان کالونی فردوس کالونی گزشتہ نو سالوں سے گیس کی سہولیات سے محروم ہیں اور گیس کے پائپوں سے گیس آنے کے بجائے نالیوں کا گندا پانی آنے لگا ہے اور گیس کے پائپ بوسیدہ ہو چکے ہیں اور کئی بار سوئی سدرن گیس کمپنی اوستہ محمد کے ایس ڈی او کو شکایات کی لیکن انہوں نے کوئی توجہ نہیں دیا جس سے عوام میں سخت مایوسی پھیل چکا ہے انہوں نے کہا کہ اوستہ محمد شہر کے عوام کو نو سال گزر جانے کے باوجود اوستہ محمد کے محلوں کے عوام کو گیس فراہم نہیں کیا جارہاہے جبکہ ناجائز اور بھاری بھرکم بل ہر ماہ غریب عوام کو تھما دیئے جاتے ہیں عوام آج بھی گیس کی سہولیات سے محروم ہیں اور مہنگے داموں لکڑی خریدنے پر مجبورہیں انہوں نے وفاقی حکومت ایم پی اے میر جان محمد خان جمالی میر عطااللہ خان بلیدی اور سوئی سدرن کمپنی کے بالا حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ اوستہ محمد کے محلہ حاجی محمد یعقوب سمیت دیگر محلوں کو جلد از جلد گیس فراہم کیا جائے اور ناجائز بلوں کی بھرمار بند کرکے عوام کو بلوں کے مد میں مقروض ہونے سے بچایا جائے۔

جعفر آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments