جام پور میں موضع ہیرو کے مقام پر دریائے سندھ میں پانی کی سطح میں اضافے نے خطرے کی گھنٹی بجا دی

سیلابی ریلے سے پیدا ہونے والے زمینی کٹاؤ کے باعث ہزاروں ایکڑ رقبے پر کھڑی فصلیں اور درجنوں بستیاں بھی زیر آب آ گئیں

بدھ اگست 15:40

جام پور میں موضع ہیرو کے مقام پر دریائے سندھ میں پانی کی سطح میں اضافے ..
جام پور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین،21 اگست 2019ء، نمائندہ خصوصی، عنصر سجاد( جام پور میں موضع ہیرو کے مقام پر دریائے سندھ میں پانی کی سطح میں اضافے نے خطرے کی گھنٹی بجا دی۔ تفصیلات کے مطابق تحصیل جام پور کے علاقہ موضع ہیرو میں دریائے سندھ میں پانی کی سطح میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے جبکہ پانی میں اضافہ کے ساتھ بے رحم دریا کی موجوں کا کٹاوٴ بھی جاری ہے جس کی وجہ سے ہزاروں ایکڑ رقبے پر کھڑی فصلات زیر آب آچکی ہیں اور درجنوں بستیاں بھی دریا برد ہوچکی ہیں۔

موضع ہیرو کے مقام پر پانی سطح میں اضافہ کے ساتھ ساتھ کٹاوٴ بھی جاری ہے جس کی وجہ سے علاقہ مکینوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے جبکہ مقامی آبادی نے دریا کے کناروں پر سپر بند تعمیر کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ علاقہ مکینوں کا کہنا ہے حکومتی سطح پر ٹھوس اقدامات نہ ہونے کی وجہ سے ہر سال ان کی فصلات اور گھر دریا کی بے رحم موجوں کی نذر ہو جاتے ہیں جبکہ یہ سلسلہ اب تک درجنوں بستیوں کو تباہ کرنے کے بعد اب بھی تک جاری ہے۔

(جاری ہے)

اس سیلابی صورتِ حال نے کئی دہائیوں سے اس علاقے کے لوگوں کا جینا دو بھر کر رکھا ہے۔ اب کی بار ہونے والی تباہی کے باعث ہمارے پاس اپنے اور اپنے بچوں کا سر چھپانے تک کی جگہ میسر نہیں رہی۔ دریائی کٹاوٴ کے متاثرین نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ دریائی کناروں پر سپر بند تعمیر کیے جائیں جس کی وجہ سے نہ صرف علاقہ کی آبادی محفوظ ہوگی بلکہ آئندہ نقصانات بھی نہیں ہوں گے اور فصلیں زیر آب آنے سے کئی مہینوں کی کڑی محنت اور انتظار بھی ضائع نہیں ہو گا۔

متعلقہ عنوان :

جام پور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments