جھنگ ،تبدیلی سرکار کی حکومت میں آٹا نایاب ہو گیا ،شہری آٹے کے حصول کیلئے در بدر کی ٹھوکریں کھانے لگے

منگل اکتوبر 16:34

ْجھنگ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 13 اکتوبر2020ء) تبدیلی سرکار کی حکومت میں آٹا نایاب ہو گیا شہری آٹے کے حصول کے لیے در بدر کی ٹھوکریں کھانے لگے جبکہ یوٹیلیٹی اسٹورز پر بھی آٹا دستیاب نہیں آٹے کی قلت پیدا ہونے سے شہری شدید پریشان دکھائی دینے لگے تفصیلات کے مطابق تبدیلی کا نعرہ صرف نعرہ ہی رہ گیا جھنگ اور گردونواح میں آٹا نایاب ہو گیا شہر بھر میں آٹے کے حصول کے لیے شہری دھکے کھانے لگے ہیں زرائع کے مطابق جھنگ کے اکثر فلور ملز کے مالکان آٹا ڈسٹرکٹ جھنگ سے بیرون شہر بلیک میں فروخت کررہے ہیں تاکہ ہماری آمدن زیادہ سے زیادہ ہو سکے اور ہمیں منافع بھی زیادہ سے زیادہ ہو جبکہ شہر بھر میں عوام آٹا کو خریدنے کے لئے دھکے کھا رہی ہے شہریوں کا کہنا ہے کہ سارا دن ہم آٹا کو خریدنے کے لئے شہر بھر کی دوکانوں پر چکر لگاتے ہیں لیکن ہمیں آٹا نہیں ملتا ہے جس وجہ سے ہمارے چھوٹے چھوٹے بچے بھوک سے بلک رہے ہیں تین دن ہو چکے ہم صرف چاول کھا کر اپنا اور اپنے بچوں کاپیٹ بھر رہے ہیں جبکہ کچھ شہریوں کا یہ بھی کہنا تھا کہ شہر میں اگر آٹا کہیں مل بھی جاتا ہے تو دو یا تین کلو آٹا دوکاندار بھاری قیمت میں فروخت کرتے ہیں اگر یہ ہی حال رہا تو شہر بھر میں لوگ بھوک سے مرنا شروع ہو جائیں گے شہریوں نے ڈپٹی کمشنر محمد طاہر وٹو سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

متعلقہ عنوان :

جھنگ شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments