ایمریٹس نے سفری انشورنس کا دائرہ کار وسیع کردیا

بدھ نومبر 20:18

ایمریٹس نے سفری انشورنس کا دائرہ کار وسیع کردیا
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 25 نومبر2020ء) ایمریٹس نے اپنے مسافروں کے بحفاظت سفر کو یقینی بنانے اور انہیں مطمئن رکھنے کے لئے ایئرلائن انڈسٹری میں اپنی نوعیت کا پہلا اقدام متعارف کرادیا ہے۔ ایمریٹس کی جانب سے اس اقدام کے تحت مسافروں کو کرونا کی موجودہ لہر میں پہلے سے بھی وسیع سفری انشورنس کی کوریج حاصل ہوگی۔ سب سے دلچسپ بات یہ ہے کہ ایمریٹس کی جانب سے اسکے مسافروںسے اس سہولت کیلئے کوئی اضافی رقم وصول نہیں کی جائے گی اور یہ میڈیکل کور یج اے آئی جی ٹریول کی جانب سے فراہم کی جائے گی ۔

یہ ایئرلائن اور ٹریول انشورنس انڈسٹری میں اپنی نوعیت کا پہلا کور ہے۔ اسے اس طرح ترتیب دیا گیا ہے کہ ایمریٹس کے تمام مسافر منفرد انداز سے کسی دباؤ اور پریشانی کے بغیر محفوظ رہ سکیں گے۔

(جاری ہے)

حالیہ اقدام میں ٹریول انشورنس اور کرونا کوریج خودکار طور پر یکم دسمبر سے ایمریٹس کے ٹکٹ کی خریداری کرنے والے تمام صارفین پر قابل اطلاق ہوگا اور یہ پارٹنر ایئرلائنز کی آپریٹ کردہ ایمریٹس کی کوڈ شیئر فلائٹس تک پھیلا ہوا ہے۔

ایمریٹس کے چیئرمین اور چیف ایگزیکٹو عزت مآب شیخ احمد بن سعید المختوم نے کہا، "ایمریٹس وہ پہلی ایئرلائن تھی جس نے مسافروں کے لئے جولائی میں ہی عالمی سطح پر کرونا کا اعزازی کور فراہم کیا تھا اور ہمارے صارفین کا ردعمل بہت شاندار رہا۔ ہم یہ اعزاز ملنے پر آرام سے بیٹھے نہ رہے بلکہ ہم نے اپنے صارفین کو مزید بہتر انداز سے خدمات کی فراہمی کے لئے کام جاری رکھا۔

ہم اب کثیر الخطراتی سفری انشورنس اور کرونا کور کی فراہمی پر انتہائی خوش ہیں جو ہمارے تمام صارفین کے لئے اس انڈسٹری میں ایک بار پھر نیا اقدام ہے۔" انہوں نے کہا، "دنیا بھر میں لوگوں کے اندر سفر کی خواہش بڑھتی جارہی ہے، بالخصوص موسم سرما کی تعطیلات میں لوگ اپنے اہل خانہ کے ہمراہ دبئی جیسے گرم موسم والے مقامات کے سفر کے خواہاں ہوتے ہیں۔

اس کثیر خطراتی سفری انشورنس اور کرونا کوریج کے آغاز کے ساتھ ہمارا عزم ہے کہ اپنے صارفین کو رواں موسم سرما اور اگلے سال میں سفری تیاروں کے لئے زیادہ پراعتماد انداز سے خدمات پیش کریں۔" ایمریٹس کے صارفین کو طبی کوریج فراہم کی جائے گی، چاہے وہ کسی بھی مقام کا سفر کریں یا کسی بھی کلاس کے مسافر ہوں۔ اس کی تفصیلات درج ذیل ہیں: بیرون ملک سفر کے دوران دیگر میڈیکل ایمرجنسیز اور (سفر کے دوران) کرونا کی تشخیص پر آؤٹ کنٹری ایمرجنسی میڈیکل ایکسپنسز اینڈ ایمرجنسی میڈیکل ایویکیویشن کے ذریعے 5 لاکھ ڈالر تک کی کوریج حاصل ہوگی۔

ٹرپ کینسل پر ساڑھے سات ہزار ڈالرز کی ناقابل واپسی کوریج کی لاگت ہوگی، اگر طے شدہ ٹرپ کی روانگی کی تاریخ سے قبل کرونا کی تشخیص کی وجہ سے مسافر یا اس کا قریبی شخص (پالیسی میں متعین) سفر کرنے سے قاصر ہو، یا دیگر منتخب وجوہات ہوں ، جو دیگر جامع سفری کوریج کی مصنوعات سے ملتی جلتی ہوں۔ ٹرپ کینسل یا تاخیر کے باعث ملتوی ہونے پر ساڑھے سات ہزار ڈالرز تک کی کوریج ہوگی، اگر روانگی کی تاریخ سے آگے اسکول کے تعلیمی سال میں کرونا کی وجہ سے توسیع ہوتی ہے، اور مسافر یا اس کا قریبی شخص (پالیسی میں متعین) پرائمری یا سیکنڈری اسکول میں طالب علم ، کل وقتی استاد ، یا کل وقتی ملازم ہو۔

ٹرپ تاخیر سے ملتوی ہونے پر ناقابل واپسی ساڑھے سات ہزار ڈالرز تک کے سفری اخراجات کوریج میں شامل ہوں گے اور اپنی ملکی رہائش کی واپسی پر اضافی لاگت قابل اطلاق ہوگی، اگر مسافر یا اسکا قریبی شخص (پالیسی میں متعین) میں سفر کے دوران کرونا کی تشخیص ہوتی ہے، یا شدید بیمار ہوجاتا ہو۔ تاخیر کے باعث سفر کے تعطل پر ساڑھے سات ہزار ڈالرز تک کی کوریج شامل ہوگی، اگر مسافر ایئرپورٹ پر میڈیکل اسکریننگ یا کرونا سے متعلقہ ٹیسٹ میں ناکام رہتا ہے اور اسے سفر ترک کرنے کی ضرورت ہو۔

یومیہ فی شخص کو 150 ڈالرز کی مسلسل 14 ایام کی کوریج حاصل ہوگی، اگر وہ اپنے رہائشی ملک سے باہر ہو ، مسافر کا کرونا ٹیسٹ مثبت آیا ہو اور اگر انہیں غیرمتوقع طور پر کسی سرکاری ادارے کی جانب سے کسی دوسرے ملک میں لازمی قرطینہ میں ڈال دیا گیا ہو۔ اے آئی جی ٹریول کے سی ای او جیف رٹ لیج نے کہا، "ایمریٹس کے ساتھ ہمارا دیرینہ تعلق ہے اور ہم ان کے ساتھ کام کرنے اور دنیا بھر میں ایمریٹس کے صارفین کی ضروریات کی تکمیل کیلئے انکی مطلوبہ پروڈکٹ کے لئے پرجوش ہیں۔

ہم پرامید ہیں کہ اس اقدام کی بدولت ان مسافروں کے بعض تحفظات کا خاتمہ ہوگا جو اس عرصے کے دوران سفر کا ارادہ باندھ رہے ہیں۔" اس کے علاوہ ایمریٹس سفر کے دوران ذاتی حادثات، موسم سرما کے کھیلوں کی کوریج، ذاتی نقصانات، اور فضائی سفر کی بندش، سفری ہدایات کے باعث سفر میں تعطل پر بھی فراخدلانہ کوریج پیش کرتا ہے۔ صارفین کو سفر سے قبل کسی طرح کے فارم کے اندراج یا خود کو رجسٹرڈ کرانے کی ضرورت نہیں ہے۔ مزید تفصیلات برائے مہربانی اس لنک (www.emirates.com/multi-risk-travel-insurance) پر وزٹ کرکے جان لیں ۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments