اُردو پوائنٹ پاکستان کراچیکراچی کی خبریںگزشتہ رات پارلر سے غائب ہونے والی لڑکی کے واقعے کا ڈراپ سین ہوگیا لڑکی ..

گزشتہ رات پارلر سے غائب ہونے والی لڑکی کے واقعے کا ڈراپ سین ہوگیا

لڑکی اپنی مرضی سے اپنے منگیتر کے ساتھ چلی گئی تھی ،لڑکی نے اپنے منگیتر سے شادی کرلی

کراچی(اردوپوائنٹ تازہ ترین اخبار-25 ستمبر 2018ء):گزشتہ رات پارلر سے غائب ہونے والی لڑکی کے واقعے کا ڈراپ سین، لڑکی اپنی مرضی سے اپنے منگیتر کے ساتھ چلی گئی تھی۔لڑکی نے اپنے منگیتر سے شادی کرلی۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ رات کراچی میں نارتھ ناظم آباد کےعلاقے تیموریہ میں بیوٹی پارلر کے باہر سے دلہن لاپتہ ہوگئی تھی۔نئی نویلی دلہن کے والدین کا کہنا ہے کہ لڑکی کو اغوا کرنے والا اس کا سابق منگیتر ہے۔

لڑکی کے والدین نے مزید کہا کہ ان کی بیٹی کی 30 ستمبرکو شادی تھی اور مایوں کی تیاری کے لیے وہ اپنی بہن کے ساتھ تیموریہ میں واقع ایک بیوٹی پارلرگئی تھی۔ دوسری جانب پولیس کا دلہن کے اغوا ہونے کے واقعے سے متعلق کہنا ہے کہ ممکنہ طورپر لڑکی نے ہی اپنے سابق منگیترکو پارلر بلایا تھا اور وہ اپنی مرضی سے اس کے ساتھ چلی گئی۔

(خبر جاری ہے)

ایش ایچ اور تیموریہ کے مطابق اغوا سے قبل لڑکی کا اپنے سابق منگیتر کے ساتھ رابطہ تھا۔

چوہدری طفیل کے مطابق پولیس نے پارلر انتظامیہ سے بھی پوچھ گچھ کی ہے، انہوں نے کہا کہ بہت جلد لڑکی کوبازیاب کرالیا جائے گا۔تاہم اس حوالے سے تازہ ترین خبر یہ ہے کہ کراچی کے علاقے نارتھ ناظم آباد میں بیوٹی پارلر کے باہر سے دلہن کے پراسرار طور پر لاپتہ ہونے کا ڈراپ سین ہوگیا ہے، پولیس کے مطابق لڑکی نے کورٹ میں سابق منگیتر علی سے شادی کرلی۔

اس حوالے سے بات کرتے ہوئے پولیس کا کہنا تھا کہ علی لڑکی کا سابقہ منگیتر تھا جسے لڑکی نے خود فون کرکے پارلر بلایا جب کہ علی کے پارلر پہنچنے پر لڑکی کی بہن نے شور مچایا تھا۔ پولیس حکام کا کہنا ہے کہ بہن کے شور مچانے پر لوگ جمع ہوگئے تھے لیکن اس موقع پر لڑکی نے لوگوں کو کہا کہ وہ اپنی مرضی سے جارہی ہے۔ پولیس حکام کا کہنا تھا کہ اب تک کی تحقیقات میں 4 لوگوں کے پارلر پر پہنچنے کے کوئی شواہد نہیں ملے، وہاں صرف لڑکی کا سابق منگیتر علی آیا تھا۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

کراچی شہر کی مزید خبریں