موجودہ دور حکومت میں احتساب کے نام پر لوگوں کو ناجائزتنگ کیا جارہا ہے، ان کی پگڑیاں ا چھالی جارہی ہیں، رکن سندھ اسمبلی فریال تالپور

ملک میں ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت ایسے حالات پیدا کئے جارہے ہیں کہ لوگ ملک سے تنگ نہ آجائیں لیکن ان انتقامی کارروائیوں سے ہم گھبرانے والے نہیں ہمیں مقدمات سے کوئی فرق نہیں پڑتا، پیپلز پارٹی نے ماضی میں بھی مقدمات کا سامنا کیا ہے، سندھ اسمبلی میں خطاب

پیر ستمبر 22:55

موجودہ دور حکومت میں احتساب کے نام پر لوگوں کو ناجائزتنگ کیا جارہا ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 16 ستمبر2019ء) سابق صدر آصف علی زرداری کی ہمشیرہ اور اسیر رکن سندھ اسمبلی محترمہ فریال تالپور نے کہا ہے کہ موجودہ دور حکومت میں احتساب کے نام پر لوگوں کو ناجائزتنگ کیا جارہا ہے، ان کی پگڑیاں ا چھالی جارہی ہیں اوربے گناہوں کو سیاسی انتقامی کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔پیر کو سندھ اسمبلی میں اپنے ایک نکتہ اعتراض پر اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک میں ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت ایسے حالات پیدا کئے جارہے ہیں کہ لوگ ملک سے تنگ نہ آجائیں لیکن ان انتقامی کارروائیوں سے ہم گھبرانے والے نہیں،ہمیں جیلوں اور جھوٹے الزمات سے نہیں ڈرایا جاسکتا، ہم ماضی میں بھی یہ سب کچھ جھیلتے آئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ احتساب ہو تو بلا تفریق ہو۔

(جاری ہے)

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے صرف تقاریر کی ہیں جس میں اپنا نقطہ نظر واضح کیا ہم نے کسی ملک سے کبھی مدد نہیں مانگی۔ انہوں نے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی مدت میں توسیع کو اچھا اقدام قراردیتے ہوئے کہا کہ اس فیصلے کو ہم اچھا سمجھتے ہیں،اس سے پالیسی میں تسلسل رہیگا ۔انہوں نے موجودہ حکومت کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ پھر کہتی ہوں سیاسی انتقامی کارروائیوں کا نشانہ بنانا بند کیا جائے ورنہ حکومت کو اس کا خمیازہ خود بھگتنا پڑے گا۔

فریال تالپور نے کہا کہ کشمیر کے ایشو پر جو ہورہا ہے وہ بہت ب را ہورہا ہے ،لائن آف کنٹرول پر پاک فوج کے جوانوں کی شہادت پر افسوس ہے ،انہوں نے کہا کہ حالات کچھ ایسے ہیں کہ پارلیمنٹ خاموش ہے ،ہم صرف آرڈیننس پر چلتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اسپیکر کا شکریہ اداکرتی ہوںکہ ان کے پروڈکشن آرڈر پر یہاں پہنچی ہوں۔انہوں نے ارکان سندھ اسمبلی کا بھی شکریہ ادا کیا جنہوں نے ان کے حق میں قرارداد منظور کی۔فریال تالپور نے کہا کہ ہمیں مقدمات سے کوئی فرق نہیں پڑتا، پیپلز پارٹی نے ماضی میں بھی مقدمات کا سامنا کیا ہے اس وقت بھی پیپلز پارٹی کے بہت سے رہنما جن میں اسپیکر سندھ اسمبلی بھی شامل ہیں اس مرحلے سے گزررہے ہیں لیکن انشااللہ کامیابی ہماری ہوگی۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments