انیس قائم خانی کا ٹڈی دل کے حملے کے نتیجے میں لاکھوں ایکڑ اراضی پر تیار کھڑی فصلوں اور پھلوں کے باغات کو تباہی پر گہری تشویش کا اظہار

سندھ میں 40 فیصد اناج اور ٹماٹر کی فصلیں مکمل طور پر تباہ ہوگئی ہیں۔ جبکہ اطلاعات کے مطابق ابھی پاکستان میں ٹڈی دل کے مزید دو حملے متوقع ہیں فصلوں کو ٹڈی دل کے حملے سے بچانے کے لئے موثر اقدامات بروئے کار لائے جائیں ورنہ آنے والے دنوں میں اجناس کی شدید قلت کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے

ہفتہ مئی 00:08

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 29 مئی2020ء) صدر پاک سر زمین پارٹی انیس قائم خانی نے تمام صوبائی اور وفاقی حکومتوں کو پیشگی اطلاعات ملنے کے باوجود ٹڈی دل کے حملے کے نتیجے میں لاکھوں ایکڑ اراضی پر تیار کھڑی فصلوں اور پھلوں کے باغات کو تباہی پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس ضمن میں حکومتی نااہلی کے باعث پاکستان جو ایک زرعی ملک ہے اسکے 135 اضلاع میں سے 60 اضلاع شدید متاثر ہوچکے ہیں، یعنی 45 فیصد پاکستان پر اس وقت ٹڈی دل کا حملہ ہوچکا ہے، سندھ میں 40 فیصد اناج اور ٹماٹر کی فصلیں مکمل طور پر تباہ ہوگئی ہیں۔

جبکہ اطلاعات کے مطابق ابھی پاکستان میں ٹڈی دل کے مزید دو حملے متوقع ہیں۔ اس کے باوجود حکومت پاکستان اور چاروں صوبائی حکومتوں کی بے حسی اور نااہلی دیدنی ہے کیونکہ حکومت کی جانب سے کسی قسم کے اقدامات نا تو پہلے کیے گئے اور نا اب کیے جارہے ہیں جو کسانوں کے ساتھ ہی نہیں بلکہ پاکستان جیسے زرعی ملک کیساتھ سراسر دشمنی ہے۔

(جاری ہے)

کسان اپنی مدد آپ کے تحت ٹڈی دل کے حملوں سے نبرد آزما ہیں کیونکہ حکومت نام کی کوئی شے نظر نہیں آرہی۔

حکمران عوامی مسائل کے حل میں سنجیدہ نہیں ہیں جس کی وجہ سے عام عوام کیساتھ اب کسان بھی شدید ذہنی اذیت میں مبتلا ہیں۔ یہ بات انہوں نے لاڑکانہ ڈسٹرکٹ سے تعلق رکھنے والے کسانوں کے وفد سے پاکستان ہاوس میں گفتگو کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ٹڈی دل کے لشکر نے سندھ، بلوچستان، پنجاب اور کے پی میں ہولناک تباہی مچادی مگر نالائق حکمرانوں کو ملک کی پرواہ ہی نہیں ہے۔

انیس قائم خانی نے وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے مطالبہ کیا کہ زبانی جمع خرچ چھوڑ کر فوری طور زرعی ایمرجنسی کا نفاذ کیا جائے، کسانوں کو تباہ شدہ فصلوں کے معاوضہ ادا کیے جائیں اور فصلوں کو ٹڈی دل کے حملے سے بچانے کے لئے موثر اقدامات بروئے کار لائے جائیں ورنہ آنے والے دنوں میں اجناس کی شدید قلت کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پی ایس پی اس مصیبت کی گھڑی میں کسانوں کے ساتھ کھڑی ہے اور ہر فورم پر انکی آواز بنے گی۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments