کورونا وائرس کے باعث پاکستان کی مجموعی ترقی کی شرح متاثر ہوئی،ملک میں اسلامی بینکاری تیزی سے فروغ پارہی ہے ،ڈپٹی گورنراسٹیٹ بینک

،اسلامک بینک عام بینکنگ سے بہت بہتر سروس دے رہاہے،اسلامی بینکوںکے ڈپازٹ5ہزار ارب روپے تک پہنچنے کا امکان ہے جبکہ بینکنگ ڈپازٹ میں50فیصد تک اضافے کی گنجائش ہے،سیماکامل

جمعرات نومبر 21:40

کورونا وائرس کے باعث پاکستان کی مجموعی ترقی کی شرح متاثر ہوئی،ملک میں ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 26 نومبر2020ء) اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی ڈپٹی گورنر سیما کامل نے کہا ہے کہ کورونا وائرس کے باعث پاکستان کی مجموعی ترقی کی شرح متاثر ہوئی،ملک میں اسلامی بینکاری تیزی سے فروغ پارہی ہے ،اسلامک بینک عام بینکنگ سے بہت بہتر سروس دے رہاہے،اسلامی بینکوںکے ڈپازٹ5ہزار ارب روپے تک پہنچنے کا امکان ہے جبکہ بینکنگ ڈپازٹ میں50فیصد تک اضافے کی گنجائش ہے۔

،وہ جمعرات کومقامی ہوٹل میں نویں اسلامک فنانس ایکسپو اینڈ کانفرنس سے خطاب کررہی تھیں۔اس موقع پر میزان بینک کے صدر و سی ای او عرفان صدیقی ،معاشی تجزیہ نگار عتیق الرحمان اور دیگر نے بھی خطاب کیا ۔ڈپٹی گورنر اسٹیٹ بینک سیماکامل کا اپنے خطاب میںمزید کہنا تھا کہ کورونا کی وجہ سے جی ڈی پی گروتھ میں کمی آئی ہے ،اس لئے پاکستان کو صنعتی ترقی کی جانب لے جانا ہوگا،پلانٹ اور مشینری کی درآمد ہونے سے پیداوار کے ساتھ روزگار کے موقع بھی پیدا ہونگے،اسلامک بینک سمیت عام بینکنگ صارفین کو تمام سہولت فراہم کررہے ہیں ،خاص طور سے ہاؤسنگ فنانس پر بہت زیادہ توجہ دی جارہی ہے ،ہاؤسنگ فنانس میںسب سے زیادہ کردار خواتین کا ہوگا اور گھریلو خواتین بھی اب ذاتی گھر کا خواب پورا کرسکیںگی۔

(جاری ہے)

صدر میزان بینک عرفان صدیقی نے اس موقع پر کہا کہ کورونا وبا میں آن لائن بینکنگ کا تصور تیزی سے فروغ پارہا ہے،پاکستان سمیت اسلامی ممالک میں اسلامک بینکاری میں اضافہ ہورہا ہے اوراسلامک بینکنگ 18فیصد بڑھ چکی ہے،اسلامک بینکنگ ڈبل ڈیجیٹ میں جبکہ کمرشل بینکنگ سنگل ڈیجیٹ میں کام کررہی ہے ،ابھی مجموعی طور پر بینکنگ انڈسٹری کا مجموعی ڈپازٹ 17ہزار ارب روپے ہے اور موجودہ اسلامک بینکنگ کا ڈپازٹ 18فیصد اضافے سے 3ہزار ارب پر پہنچ گیا ہے ،ماہرین کے مطابق اگر ترقی کی یہی رفتار رہی تو بینکنگ انڈسٹری ڈپازٹ گروتھ 10فیصد اضافے سے سال 2020 میں 20ہزار ارب تک پہنچ سکتا ہے۔

چئیرمین فنانس کمیٹی کراچی چیمبر،معاشی تجزیہ نگارعتیق الرحمان نے کہا کہ کورونا وبا ء کے دوران اس کانفرنس کا ایس او پیز کے ساتھ ہونا خوش آئندہے،کورونا وبا میں آن لائن بینکنگ کا تصور تیزی سے فروغ پارہا ہے۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments