سندھ ہائی کورٹ،17سالہ نوجوان کے خلاف دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمے میں حفاظتی ضمانت منظور

پیر 29 نومبر 2021 16:16

سندھ ہائی کورٹ،17سالہ نوجوان کے خلاف دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمے میں حفاظتی ضمانت منظور
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 29 نومبر2021ء) سندھ ہائی کورٹ نے روڈ ایکسیڈنٹ کے باعث چلنے سے قاصر 17 سالہ نوجوان کے خلاف دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمے میں حفاظتی ضمانت منظور کرلی۔ ہائیکورٹ میں ایکسیڈنٹ کے باعث چلنے سے قاصر 17 سالہ نوجوان کیخلاف دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمے کا اندراج سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی۔ درخواستگزار کے وکیل انصاف علی نے موقف دیا کہ کندھ کوٹ پولیس نے رشوت نہ دینے پر مقدمہ درج کیا۔

(جاری ہے)

روڈ ایکسیڈنٹ کے باعث دونوں ٹانگوں کے آپریشن ہو چکا ہے۔ محمد زبیر ٹھیک طرح سے چل بھی نہیں سکتا۔ محمد زبیر پر پولیس کی جانب سے دہشت گروی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ پولیس مقابلے، اقدام قتل سمیت دہشتگردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا۔ سندھ ہائیکورٹ نے زبیر احمد کی حفاظتی ضمانت منظور کرلی۔ عدالت نے زبیر احمد کی 25 ہزار روپے میں حفاظتی منظور کرتے ہوئے دو دسمبر تک متعلقہ ٹرائل کورٹ سے رجوع کرنے کی ہدایت کردی۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments

>