پاکستان کی زرعی معیشت تباہ ہوچکی ہے،اس وقت ہم باہر سے گندم، چاول اور چینی منگوا رہے ہیں،بلاول بھٹوزرداری

تین سالوں میں جتنا اِس سلیکٹڈ حکومت نے پاکستان کی زرعی معیشت کو نقصان پہنچایا، اتنا ہی ہماری پوری معیشت کو نقصان پہنچایا ہے،چیئرمین پیپلزپارٹی پاکستان پیپلز پارٹی کی کال پرآج21 جنوری سے لاڑکانہ ڈویژن اور پنجاب کے ساہیوال ڈویژن سے احتجاج شروع ہورہا ہے،ہم اپنے کسان بھائیوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہو کر احتجاج کریں گے، ٹریکٹر ٹرالی مارچ کے حوالے سے ویڈیو پیغام

جمعہ 21 جنوری 2022 00:12

پاکستان کی زرعی معیشت تباہ ہوچکی ہے،اس وقت ہم باہر سے گندم، چاول اور چینی منگوا رہے ہیں،بلاول بھٹوزرداری
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 20 جنوری2022ء) پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہاہے کہ پاکستان کی زرعی معیشت تباہ ہوچکی ہے،تین سالوں میں جتنا اِس سلیکٹڈ حکومت نے پاکستان کی زرعی معیشت کو نقصان پہنچایا، اتنا ہی ہماری پوری معیشت کو نقصان پہنچایا ہے،21جنوری سے لاڑکانہ اور ساہیوال ڈویژن سے کسان مارچ شروع کریں گے، 24 جنوری سے کسان مارچ ملک بھر میں پھیل جائے گا۔

بلاول ہائوس میڈیا سیل سے کسانوں سے اظہار یکجہتی کے لئے ہونے والے ٹریکٹر ٹرالی مارچ کے حوالے سے ویڈیو پیغام میں بلاول بھٹو زرداری نے کہاکہ ہم سمجھتے ہیں کہ کسان خوشحال ہوتا ہے تو ملک خوشحال ہوتا ہے۔زراعت ہماری معیشت کی ریڑھ کی ہڈی ہے۔اگر ہم زرعی معیشت کو کھڑا کردیں گے تو پوری معیشت ترقی کرسکتی ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہاکہ پاکستان پیپلز پارٹی کے دور میں ہم گندم، چاول اور چینی اپنی ضروریات پوری کرنے کے بعد برآمد کرتے تھے۔

اس وقت ہم باہر سے گندم، چاول اور چینی منگوا رہے ہیں۔جب سے خان صاحب کی حکومت آئی ہے، کسانوں کو ان کے فصل کی قیمت نہیں مل رہی۔بلاول بھٹو زرداری نے کہاکہ پیٹرولیم مصنوعات مہنگا ہونے کی وجہ سے ٹیوب ویل اور ٹریکٹر سمیت کاشت کاروں کی پیداواری لاگت میں اضافہ ہوا ہے۔ہمارے پچھلے سیزن میں پانی نہ ملنے کی وجہ سے پیڈی فصل کو نقصان ہوا۔اب یوریا کے بحران کی وجہ سے، کھاد کے بحران کی وجہ سے ہماری گندم کی فصل کو نقصان ہوگا۔

انہوں نے کہاکہ ہم سمجھتے ہیں کہ ہمارا زرعی سیکٹر ایک منافع بخش کاروبار ہے،ہم سمجھتے ہیں کہ زرعی شعبے کے لیئے بہت زیادہ سرمایہ کاری کی ضرورت ہے۔اگر ہم زراعت میں سرمایہ کاری اور کسان کی خوشحالی کا بندوبست کرتے ہوئے فصل کی قیمت دلوائیں گے، تو وہی کسان نہ صرف پاکستان کو کھلا سکتا ہے، بلکہ وہ دنیا بھر میں اپنی فصل کو بیچ سکتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ پاکستان پیپلز پارٹی کی کال پرآج(جمعہ) 21 جنوری سے لاڑکانہ ڈویژن اور پنجاب کے ساہیوال ڈویژن سے احتجاج شروع ہورہا ہے۔

ہم اپنے کسان بھائیوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہو کر احتجاج کریں گے۔24جنوری تک کسانوں سے ہونے والی زیادتیوں کے خلاف احتجاج، انشااللہ، ملک بھر میں پھیلے گا۔ہم ہر ڈویژن میں، انشااللہ، اپنا کسان مارچ، ٹریکٹر مارچ کریں گے۔ہم کسانوں کے مسائل کو توجہ دلوائیں گے۔بلاول بھٹو زرداری نے کہاکہ ہم اس نالائق و نااہل حکومت کو ایکسپوز کریں گے۔انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ پاکستان پیپلز پارٹی کا ساتھ دیں پاکستان کی زرعی معیشت کو بچائیں اور عمران کو بھگائیں۔انہوں نے کہاکہ پاکستان پیپلز پارٹی نے ہر دور میں پاکستان کے کسان کا خیال رکھا ہے۔پاکستان پیپلز پارٹی نے ہر دور میں پاکستان کے کسان کی خدمت کی ہے، اور انشااللہ آئندہ بھی کریں گے

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments