آج سندھ کے شہری علاقوں میں یوم سیاہ منایا جائیگا، وزیر اعلیٰ کو لگام نہ دی گئی تو بلاول ہائوس بھی اسی شہرمیں ہے، خالدمقبول صدیقی

پیپلز پارٹی کی متعصب بدعنوان نسل پرست حکومت نے ماضی کی تاریخ کو دہرایا ہے اور شہر کی مائوں ،بہنوں ،بیٹیوں پر ڈنڈے برسا کر اس شہر کی غیرت کو للکارا ہے،کنوینرایم کیوایم پاکستان وزیر اعظم پاکستان سے یہ بھی مطالبہ کرتے ہیں کہ ایک طرف پاکستان توڑنے والے ہیں اور دوسری جانب پاکستان کو بچانے کی کوشش کرنے والے ہیں فیصلہ آپ کریں ، پریس کلب کے باہر پریس کانفرنس

بدھ 26 جنوری 2022 23:10

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 26 جنوری2022ء) ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے پریس کلب کے باہر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج پیپلز پارٹی کی متعصب بدعنوان نسل پرست حکومت نے ماضی کی تاریخ کو دہرایا ہے اور شہر کی مائوں ،بہنوں ،بیٹیوں پر ڈنڈے برسا کر اس شہر کی غیرت کو للکارا ہے پر امن مظاہرے پر لاٹھی چارج اور آنسو گیس کا بے تہاشہ استعمال کر کہ سندھ حکومت نے ثابت کیا کہ نہ صرف وہ جعلی مینڈیٹ ،جھوٹی مردم شماری کے ذریعے اقتدار پر قابض ہے اور وردی میں ملبوس دہشت گردپولیس کی ایما پر شہر کی مائوں ،بہنوں ،بیٹیوں پر ڈنڈے برساتے رہے اور یہ سب کچھ غیر مقامی پولیس نے کیا ہے اطلاعات آرہی ہیں کہ ایک سال کا بچہ جو اپنی ماں کی گود میں تھا وہ آنسوں گیس کا شیل لگنے سے جاں بحق ہوا ہے خداء کرے ہماری یہ اطلاع درست نہ ہو دو مختلف سفید رنگ کی ویگو گاڑیوں میں ہماری تین بہنوں رعنا انصار ،زاہدہ اور رابعہ کو گرفتار کر کہ لے جایا گیا ہے اگر رات تک انہیں رہا نہ کیا گیا تو تھانوں کی ذمہ داری ہوگی ہمیں یہ اطلاعات بھی مل رہی ہیں کہ آنسو گیس کا شیل لگنے سے درجنوں کارکنان زخمی ہوئے ہیں نارتھ کراچی ،نیو کراچی کے سابق ناظم اور سینئر کارکن حنیف سورتی کی ایک آنکھ شیل لگنے سے شدید زخمی ہوگئی ہے جبکہ اورنگی ٹائون سے منتخب ہونے والے رکن سندھ اسمبلی صداقت حسین شدید زخمی ہیں اور وہ اس وقت انتہائی نگہداشت کے وارڈ میں ہے اللہ انکو اپنے امان میں رکھے ،سندھ کی متعصب حکومت کو ہم یہ بتادینا چاہتے ہیں اگر24گھنٹوں میں ڈی آئی جی کو نہیں ہٹایا تو ہم پھر سی ایم ہائوس کا گھیرائو کریں گے ۔

(جاری ہے)

ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی کا مزید کہنا تھا کہ ہم وزیر اعظم اور وفاق سے مطالبہ کرتے ہیں کہ حجت تمام ہو چکی ہے اور اب آئین اور قانون کی مطابق فیصلہ کیا جائے اور شہر کراچی وزیر اعظم کا انتظار کر رہا ہے اور کل انہیں یہاں تشریف لانا چاہئے آج سندھ حکومت کے اقدامات نے ہماری غیرت کو للکارا ہے ہم ماضی میں جمہوریت کے خاطر احتیاط سے کام لیتے رہے لیکن یہ بھی ہماری غیرت کا تقاضہ نہیں کہ ہماری مائیں ،بہنیں پٹتی رہیں اور ہم تماشہ دیکھتے رہیں کل سندھ کے شہری علاقوں میں یوم سیاہ منایا جائیگا میں تاجر برادری ،صنعتکاروں ،ملازمین ،سول سوسائٹی اور تمام شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد سے کہتا ہوں کہ شہر کی غیرت کے خاطر ہماری آواز کے ساتھ ہماری آواز ملائیں ،وزیر اعظم پاکستان سے یہ بھی مطالبہ کرتے ہیں کہ ایک طرف پاکستان توڑنے والے ہیں اور دوسری جانب پاکستان کو بچانے کی کوشش کرنے والے ہیں فیصلہ آپ کریں ،میں قانون نافذ کرنے والے اداروں سے کہتا ہوں کہ وہ غیر جانبدار ہو جائیں اور زرداری صاحب کو بھی یہ باور کراتا چلوں کہ وہ وزیر اعلیٰ کو لگام نہ دی گئی تو بلاول ہائوس بھی اسی شہر میں ہے ۔

دریں اثنا ایم کیو ایم پاکستان کی پر امن ریلی جو شارع فیصل ایف ٹی سی سے روانہ ہوئی تھی وہ پر امن طریقے سے وزیر اعلیٰ ہائوس پہنچی تو اسے بہیمانہ تشدد کے ذریعے لاٹھی چارج کیا گیا اور آنسو گیس کا بے دریغ استعمال کر کہ مظاہرین کو منتشر کرنے کی کوشش کی لیکن پر امن مظاہرین نے وزیر اعلیٰ ہائوس سے نکل کر پریس کلب پر جمع ہو کر احتجاج ریکارڈ کروایا۔اس موقع پر سینئر ڈپٹی کنوینر عامر خان ،ڈپٹی کنوینر وسیم اختر اراکین رابطہ کمیٹی ،ممبر قومی و صوبائی اسمبلی و دیگر بھی موجود تھے ۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments