کراچی ایکسپو سینٹر میں ویکسین کا عمل معطل، طلبہ و طالبات کو مشکلات کا سامنا

جمعرات 27 جنوری 2022 14:17

کراچی ایکسپو سینٹر میں ویکسین کا عمل معطل، طلبہ و طالبات کو مشکلات کا سامنا
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 27 جنوری2022ء) کراچی ایکسپو سینٹر میں ویکسین کا عمل معطل ہونے کے باعث طلبہ و طالبات کو مشکلات کا سامنا ہے کیونکہ تعلیمی اداروں میں ویکسینیشن کے بغیر داخلے پر پابندی عائد ہے۔تفصیلات کے مطابق کراچی کے سب سے بڑے ویکسین سینٹر میں ویکسین کا عمل معطل ہونے سے والدین اور طلبہ و طالبات کو مشکلات کا سامنا ہے کیونکہ تعلیمی اداروں میں ویکسینیشن کے بغیر طلبہ و طالبات کے داخلے پر پابندی عائد کردی ہے۔

کراچی ایکسپو سینٹر میں صوبہ سندھ کے سب سے بڑے ویکسی نیشن سینٹر میں تنخواہوں کی عدم ادائیگی کیخلاف آئی ٹی ملازمین اور ویکسی نیٹرز کا آج چوتھے روز بھی ویکسی نیشن مہم کا بائیکاٹ برقرار ہے۔گذشتہ رات بھی ڈائریکٹر ہیلتھ کراچی ڈاکٹر اکرم سلطان اور ویکسینیٹرز میں مذاکرات ناکام ہو گئے تھے، میگا سینٹر غیر فعال ہونے کا سندھ حکومت نے تاحال نوٹس نہیں لیا، جس کے باعث ویکسین کے حصول میں شہریوں اور طالب علموں کو مشکلات کا سامنا ہے۔

(جاری ہے)

محکمہ صحت بقایاجات کی ادائیگی کے لیے تیار نہیں اور محکمہ صحت کی جانب سے تاحال تخواہیں ادا نہ ہوسکیں۔دوسری جانب سندھ میں پرائیویٹ اسکولوں کی انتظامیہ کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ 12 سے 18 سال کی عمر کے تمام طلبا کی لازمی کوویڈ ویکسینیشن کو یقینی بنائیں۔اس حوالے سے سندھ اسکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے ڈائریکٹوریٹ آف پرائیویٹ انسٹی ٹیوشنز کی جانب سے اسکول انتظامیہ کو سرکلر جاری کیا تھا۔جس میں کہا گیا تھا کہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (NCOC) کے فیصلے کے بعد 12 سے 18 سال کی عمر کے طلبا اور عملی(تعلیمی یا غیر تدریسی)کی کوویڈ ویکسینیشن لازمی ہے۔

متعلقہ عنوان :

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments