اُردو پوائنٹ پاکستان کراچیکراچی کی خبریںداؤد یونیورسٹی کا او بی ایجوکیشن سسٹم اختیار کرنے کا فیصلہ وائس چانسلر ..

داؤد یونیورسٹی کا او بی ایجوکیشن سسٹم اختیار کرنے کا فیصلہ

وائس چانسلر کی زیر صدارت اکیڈمک کونسل کا آٹھواں اجلاس,انڈسٹریل انجینئرنگ میں ایم ایس اور پی ایچ ڈی پروگرام شروع کرنیکی تجویز

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 مئی2018ء)داؤد یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کی اکیڈمک کونسل کا آٹھواں اجلاس گزشتہ روز جامعہ کے کانفرنس روم میںنوائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر فیض اللہ عباسی کی زیر صدارت منعقد کیا گیا جس میں گزشتہ اجلاس کے منٹس کی توثیق کی گئی۔ اجلاس میں پاکستان انجینئرنگ کونسل کی ہدایت کی روشنی میں آئوٹ کم بیسڈ ایجوکشن سسٹم (او بی ای) اختیار کرنے کا فیصلہ کیا گیا اور اس حوالے سے شعبہ کیمیکل انجینئرنگ میں چار سالہ بی ای پروگرام کے پی ای اوز (پروگرام ایجوکیشن اوبجیکٹس ) اور پی ایل اوز (پروگرام لرننگ آئوٹ کمز) کی تجاویز پر غوروخوض کیا گیا۔

اجلاس میں 9 مئی 2018ء کو بورڈ آف فیکلٹی ، فیکلٹی آف انجینئرنگ کے دوسرے اجلاس میں بی ای کمپیوٹر سسٹم انجینئرنگ کیلئے اسکیم آف اسٹڈیز کی تجاویز کی توثیق کی گئی جبکہ 11مئی 2018ء کو پراسپیکٹس کمیٹی کی جانب سے سمسٹر سسٹم کی ریگولرائزیشن کی تجاویز پر مشاورت کی گئی۔

(خبر جاری ہے)

اجلاس میں انڈسٹریل انجینئرنگ میں ایم ایس اور پی ایچ ڈی پروگرام شروع کی بھی تجویز دی گئی جسے منظور کرلیا گیا۔

اکیڈمک کونسل نے ریاضی اور کمپیوٹر سائنس بیچلرز پروگرام بھی شروع کرنیکی منظوری دی جس کیلئے سینڈیکٹ کے اجازت لی جائے گی اور ہائر ایجوکیشن کمیشن (ایچ ای سی) اور پاکستان انجینئرنگ کونسل (پی ای سی) سے این او سیز لئے جائیں گے۔ سینیٹر تاج حیدر ، محکمہ کالج ایجوکیشن کے ایڈیشنل سیکرٹری فقیر محمد لاکھو ، آئی بی اے کے ڈاکٹر عرفان حیدر ، پرووائس چانسلر ڈاکٹر پیر روشن دین شاہ راشدی ، ڈین آف انجینئرنگ پروفیسر ڈاکٹر عبدالوحید بھٹو ، اکیڈمک کوآرڈینٹر ڈاکٹر دوست علی خواجہ ، رجسٹرار کیپٹن (ر) سید وقار حسین شاہ ، کنٹرولر امتحانات گل محمد بھائیو ، تمام شعبوں کے چیئرپرسنز ، ڈائریکٹر کیو ای سی اور دیگر اجلاس میں موجود تھے۔

اکیڈمک کونسل نے جامعہ میں بھرپور تعلیمی سرگرمیوں اور جاری سیشن میںکلاسز کے مکمل انعقاد پر اطمینان کااظہار کیا۔ اجلاس میں ایڈوانس اسٹڈیز ریسرچ بورڈ کے اجلاسوں میں تجویز کئے گئے ایم ایس اور پی ایچ ڈی پروگرام کیلئے قواعد و ضوابط ، فیس اسٹرکچرپر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وائس چانسلر ڈاکٹر فیض اللہ عباسی نے اس عزم کا اظہار کیا کہ دائود یونیورسٹی کا نصب العین اب صرف کام کام اور کام ہوگا ، جامعہ میںنتمام کلاسز کے انعقاد کو یقینی بنادیا گیا ہے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

کراچی شہر کی مزید خبریں