والدین پولیو کے خاتمہ کیلئے ذمہ داری شہری ہونے کا ثبوت دیں، حاجی حنیف طیب

پیر ستمبر 18:37

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 21 ستمبر2020ء) المصطفیٰ ویلفیئر سوسائٹی کے سرپرست اعلیٰ پاکستان سے پولیوکے خاتمہ کیلئے روٹری علماء کمیٹی کے چیئر مین ڈاکٹر حاجی محمدحنیف طیب نے پیغام دیا کہ پوری دنیا میں صرف دوملک ایک افغانستان اوردوسراپاکستان جہاں پولیو ابھی تک باقی ہے۔یہی ویکسین پلاکر پوری دنیاسے پولیو کا خاتمہ ہواہے ۔

21سے 25 ستمبر تک بچوں کے قطرے پلانے کی مہم کا آغازہوچکا ہے ۔ٹھنڈے دل سے سوچیں پوری دنیا میں ہماراامیج کیا ہوگا جبکہ سعودیہ عرب،ترکی،کویت دیگر مسلم ممالک میں پولیو ختم ہوچکاہے۔ انہیں قطروں کو پلاکر پاکستان سے بھی یہ مرض ختم کرنا چاہتے ہیں۔پوری دنیا کے مسلمان جب بھی حج کیلئے یاحرمین شریفین کی حاضری کیلئے جاتے ہیںان کو ائیرپورٹ کے اندریہ ہی قطرے پلائیں جاتے ہیں چاہیے مرد،عورت یا بچہ ،بوڑھا جوان اس وقت کوئی منع نہیں کرتا لیکن پاکستان آکر اس حوالے سے طرح طرح کے ابہام پیداکئے جاتے ہیں۔

(جاری ہے)

وسوسے چھوڑے جاتے ہیں ،وہم کی فضا قائم کی جاتی ہے،اس وہم کی فضا کو ختم ہونا چاہیے۔ حاجی محمدحنیف طیب نے کہاکہ علماء ومشائخ نے متفقہ طورپرپولیوکے مرض کے خاتمہ کیلئے دوقطروں کو پلانا اپنے بچوں کو معذوری سے بچانے کیلئے لازم قراردیا ہے،جب پولیو کی ٹیم آئے ان کا استقبال کریں اوربچوں کو قطرے پلائیں تاکہ پاکستان سے بھی اورافغانستان سے بھی یہ مرض کا خاتمہ ہوجائے اورآپ کا بچہ بھی معذوری سے محفوظ رہے ۔

انکا مزید کہناتھاکہ اس سلسلے میںسالہاسال سے روٹری کلب انٹرنیشنل ساتھ ساتھ المصطفیٰ ویلفیئر سوسائٹی بھی اپنا کرداراداکررہی ہیں۔ میں والدین سے اپیل کرتا ہوں کہ پولیو کے خاتمہ کیلئے ذمہ داری شہری ہونے کا ثبوت دیں، آپ بھی اپنا فرض پوراکریں،پاکستان سے پولیوکا خاتمہ مشترکہ جدوجہد سے ہی ممکن ہے ،یہ صرف ڈاکٹرزیاسماجی تنظیموں کا کام نہیں ،بلکہ مذہبی تنظیموں،ائمہ خطباء،علماء ومشائخ،یونیورسٹیز،کالجزاوراسکول کے اساتذہ ،حکمرانوں ،افسران کی بھی ذمہ داری ہے ہر شخص اس سلسلے میں اپنا فرض پوراکرکے پولیو سے ہمیشہ کیلئے نجات حاصل کرنی چاہیے ۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments