آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی میں علامہ طالب جوہری کی ادبی خدمات کے اعتراف میں تقریب کا انعقاد

بدھ نومبر 20:50

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 25 نومبر2020ء) آرٹس کونسل آف پاکستان کراچی اورزمین گروپ کے تعاون سے علامہ طالب جوہری کی ادبی خدمات پر آرٹس کونسل لابی میں تقریب کا انعقاد کیاگیا جس کی صدارت تاج حیدر نے کی اور نظامت کے فرائض سید ابرار حسن نے انجام دیئے جبکہ استقبالیہ خطبہ منصور ساحر نے اپنی لکھی ہوئی نظم علامہ طالب جوہری کے نام پیش کرتے ہوئے کیا۔

صدر آرٹس کونسل محمد احمد شاہ نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ علامہ طالب جوہری کا دنیا سے چلے جانا بہت بڑا نقصان ہے، مذہبی اور ادبی حلقوں میں ان کا بہت بڑا نام تھا وہ بہت اچھے شاعر بھی تھے، علامہ صاحب نے جو بھی کام کیا کمال کیا، انہوں نے کہاکہ میں سمجھتا ہوں ان کی زندگی میں جو پذیرائی انہیں ملنی چاہیے تھی وہ نہ مل سکی مگر علامہ طالب جوہری کا نام جب تک دنیا باقی ہے نمایاں رہے گا۔

(جاری ہے)

صدر محفل تاج حیدر نے کہاکہ آج کی تقریب میں شرکت میرے لیے باعث افتخار ہے، علامہ طالب جوہری ہر وقت کربلا اور شہیدوں کا ذکر کرتے رہتے، علامہ صاحب تحقیق کرنے میں ماہر تھے ان کی تمام تحقیقات حق اور سچائی پر مبنی ہوتی تھی، انہوں نے دین کی خدمت کی اور شاعری میں ان کی مثال نہیں ملتی، کورونا وباء کے بارے میں انہوں نے کہاکہ رات کو جب آنکھ کھلتی ہے رو رو کر دُعا کرتا ہوں کہ اللہ تعالیٰ تمام لوگوں کو اس سے محفوظ رکھے، میرے لیے اعزاز کی بات ہے کہ آج میں یہاں سے بہت کچھ سیکھ کر جارہا ہوں۔

علامہ باقر حسین زیدی نے کہاکہ ہمیں علامہ صاحب کے تمام شعری اثاثوں کو محفوظ کرنا ہوگا تاکہ آنے والی نسلیں اس سے کچھ سیکھ سکیں کیونکہ اب تک ہمارے نوجوان طلباء کو یہ نہیں پتاکہ علم اور معلومات کسے کہتے ہیں اگر ہم علامہ طالب جوہری کی تحریر،نظمیں، غزلیات اور خطابت کو پیش نظر رکھیں تو اس میں انہوں نے کلمات کو نفس پر اطلاق پذیر کیا،حالیؔ کے بعد اگر بچوں پر کسی نے نظمیں لکھیں تو وہ نسیم امروہی اور علامہ طالب جوہری ہیں انہوں نے خوب صورت تقریب کے انعقاد پر اراکین آرٹس کونسل اور زمین گروپ کا شکریہ ادا کیا۔تقریب سے ڈاکٹر فاطمہ حسن،سید شبر رضا،انیس عباس،ارتضیٰ عباس نقوی،فراست رضوی،ڈاکٹر شاداب احسانی و دیگر نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments