سلیکٹیڈ حکومت کچھ بھی کرلے ملتان کا جلسہ ہوکررہے گا،ناصر حسین شاہ کی عبدالقادر اور قاسم گیلانی پر مقدمات کی مذمت

مہنگائی بیروزگاری بھوک افلاس اس حکومت کے تحفے ہیں۔پیپلزپارٹی کے قائدین کے خلاف انتقامی کارروائیاں بند نہ ہوئیں تو دمادم مست قلندرہوگا

بدھ نومبر 23:09

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 25 نومبر2020ء) صوبائی وزیراطلاعات سید ناصرحسین شاہ نے عبدالقادر اور قاسم گیلانی پر مقدمات درج کرنے کی مذمت کر تے ہو ئے کہا ہے کہ سلیکٹیڈ حکومت کچھ بھی کرلے ملتان کا جلسہ ہوکررہے گا،جلسہ روکنے کیلئے پیپلزپارٹی کے قائدین پر وفاقی اورپنجاب حکومت کی بوکھلاہٹ عیا ں ہے۔سیاست میں انتقام پی ٹی آئی کاوطیرہ رہاہے،سیاسی رہنماں پر تالے اور زنجیر چوری کے مقدمات درج کرناشرمناک عمل ہے۔

انہو ں نے کہا کہ عمران خان انتقامی کارروائیوں سے اپنی نااہلی اورناکامیو ں کونہیں چھپاسکتے۔مارشل لاادوارمیں سیاسی رہنماں پر جس طر ح کے گراوٹی کیسز بنائے جاتے تھے سلیکٹرزنے ان کی یاد تازہ کردی ہے۔یہ ثابت ہوگیا ہے کہ عمران خان کے آئیڈیل ضیاالحق اورپرویزمشرف ہیں۔

(جاری ہے)

صو با ئی وزیر نے مزید کہا کہ پیپلزپارٹی کاملتان کاجلسہ تاریخی ہوگا، حکمران پہلے ہی عوامی طاقت سے خوفزدہ ہوگئے ہیں جبکہ لاٹھی گولی اورمقدمات پیپلزپارٹی والوں کے لئے کوئی نئی بات نہیں۔

قوم سلیکٹرزکی حقیقت جان چکی ہے اور ان کی حرکتیں بتارہی ہیں کہ یہ جانے والے ہیں جبکہ مہنگائی بیروزگاری بھوک افلاس اس حکومت کے تحفے ہیں۔پیپلزپارٹی کے قائدین کے خلاف انتقامی کارروائیاں بند نہ ہوئیں تو دمادم مست قلندرہوگا۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments