قوم کو خوشنما نعروں کے پیچھے لگاکر مسائل کے دلدل میں دھکیلا جارہا ہے،علامہ راشد محمود

موجودہ حکمراں سلیکٹڈ اور عوام کے مسترد شدہ ہیں عوامی مسائل کے حل سے انہیں کوئی سروکار نہیں،سیکرٹری جنرل جے یو اآئی سندھ

جمعہ 17 ستمبر 2021 00:30

کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 16 ستمبر2021ء) جمعیت علماء اسلام صوبہ سندھ کے سیکریٹری جنرل علامہ راشد محمود سومرو نے کہا ہیکہ قوم کو خوشنما نعروں کے پیچھے لگاکر مسائل کے دلدل میں دھکیلا جارہا ہے، موجودہ حکمراں سلیکٹڈ اور عوام کے مسترد شدہ ہیں عوامی مسائل کے حل سے انہیں کوئی سروکار نہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعیت علماء اسلام صوبہ سندھ کے کراچی میں موجود اراکین مجلس عاملہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

اجلاس میں اراکین عاملہ مولانا عبد الکریم عابد، محمد اسلم غوری ، مولانا محمد غیاث، مولانا سمیع الحق سواتی ، امین اللہ ودیگر شریک ہوئے۔ علامہ راشد محمود سومرو نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ سندھ سرکار صوبے کو اپنی ملکیت سمجھ کر عوام کا خون چوس رہی ہے، ایکسپو سینٹر کراچی میں اپنی جانوں پر کھیل کر کورونا ویکسینیشن کرنے والا عملہ گزشتہ چار ماہ سے تنخواہوں سے محروم ہے، ملازمین کو فی الفور تنخواہیں ادا کی جائیں ، صوبے کے تمام ہسپتال تباہی کے دہانے پر ہیں ، انہوں نے کہا کہ شکارپور سول ہسپتال کی حالت زار یہ ہیکہ وہاں پیناڈول کی اک گولی تک میسر نہیں ، ریڈیالوجی کا کوئی ڈاکٹر تک موجود نہیں مریضوں کو سکھر اور لاڑکانہ بھیجا جارہا ہے جو حکومتی غفلت کا ثبوت ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ جییوآئی نے سندھ کے دیہی اور شہری علاقوں کو مسائل کے دلدل سے نکالنے کا عزم کررکھا ہے۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کراچی کے ضلع غربی کی جغرافیائی حدود میں رد وبدل اور نئے ضلع کیماڑی بننے پر دونوں اضلاع میں از سرنو تنظمی ڈھانچے کی تشکیل کیلئے انتخابات کئے جائیں گے۔ دونوں اضلاع میں الیکشن 4 اور 5اکتوبر کو منعقد ہوں ، اراکین مجلس عمومی کو جلد ہی دعوت نامے جاری کردیئے جائیں گی

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments