ًکراچی، اجلت میں بل پیش کر کے جمہوریت کے جھوٹے دعویداروں نے آئین کی خلاف ورزی کی ہے،حلیم عادل شیخ

ایک بار پھر جمہوریت کا جنازہ نکالا گیا ہے، پیپلزپارٹی کے ایسے اقدام پر ہم عدالت جائیں گے ،قائد حز ب اختلاف سندھ

جمعہ 26 نومبر 2021 21:00

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 26 نومبر2021ء) قائد حزب اختلاف سندھ حلیم عادل شیخ نے کہا ہے کہ ایک بار پھر جمہوریت کا جنازہ نکالا گیا ہے لوکل گورنمنٹ بل چور دروازے سے پیش کیا اصولوں بل پیش کرنے سے قبل اسٹیڈنگ کمیٹی کو بھجوایا جاتا ہے اراکین کو کاپیاں دی جاتی ہیں لیکن آج اجلت میں بل پیش کر کے جمہوریت کے جھوٹے دعویداروں نے آئین کی خلاف ورزی کی ہے۔

جوائنٹ اپوزیشن کے اراکین کے ہمراہ سندھ اسمبلی میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا دو بجے اجلاس شروع ہونا تھا سوا تین بجے تک کسی بھی رکن کو بل کی کاپیاں پیش نہیں کی گئیں میں نے سیکریٹری سندھ اسمبلی کو نوٹ بھی لکھا کہ بل کی کاپیاں ابھی تک پیش نہیں کی گئی ہیں پیپلزپارٹی کے ایسے اقدام پر ہم عدالت جائیں گے اور بل کو چیلینج کریں گے سندھ میں سویلین ڈکٹیٹرشپ قائم کی گئی ہے بلدیاتی اختیارات کو نچلی سطح پر منتقل کروانا چاہتے ہیں کہ لیکن پیپلزپارٹی نے ایک بار پھر عوام کو نچلی سطح تک اختیارات پہنچانے میں ناکام ہوئی ہے اگلی حکومت جوائنٹ اپوزیشن کی ہوگی ان کو بھاگنے نہیں دیں گے عوام کی آواز کو دبایا گیا ہے اپوزیشن کو تو علم نہیں مگر 95 فیصد حکومتی اراکین بھی اس بل سے ناواقف تھے لوکل گورنمنٹ کا اہم بل ہے جس کا سندھ کے ہر گھر سے تعلق ہے،آج پی پی آمرانہ، سردارانہ، زردارانہ سوچ کو رکھتے ہوئے ممبران کی رائے کو بلڈوز کرکے بل کو پاس کروایا پارلیمانی لیڈر متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کنور نوید جمیل نے کہا کہ سندھ حکومت نے اسمبلی ممبرز کو اعتماد میں لئے بغیر بل پاس کروایا ہے جو بلدیاتی نظام ڈاکا ڈالنے کی کوشش ہے بل پر بحث ہونے نہیں دی گئی کیوں کہ ان کا مقصد جعلسازی کرنا ہے بل کے تحت میئر چیئرمین کا انتخاب خفیہ رائے شماری کے ذریعے ہوگا تاکہ من پسند لوگوں کو منتخب اور ووٹوں کی خرید فروخت کی جاسکے مقامی اداروں کے اختیارات چھیننا سندھ کے لوگوں کے ساتھ نا انصافی ہے ان کا یہی رویہ رہا تو ہم اس جعلسازی کے خلاف سڑکوں پر آئیں اور عدالتوں سے رجوع کریں گے۔

(جاری ہے)

جی ڈٰی اے رہنما حسنین مرزا نے کہا پیپلزپارٹی نے ایسا قدم اٹھایا ہے کہ جمہوریت کے تسلسل کو خطرے میں ڈال دے گا سندھ میں سول ڈکٹیٹرشپ قائم ہے اور قانون اور قوائد کی دھجیاں اڑائیں جارہی ہیں بل پیش کرنے کے لئے موجود قوانین کو مکمل طور پر نظر انداز کیا گیا ہے اسلام آباد میں جمہوریت کا راگ الاپنے والے یہاں پر عوامی نمائندوں کے حقوق مسخ کر رہے ہیں اپوزیشن کو دیوار لگا کر قانون سازی کریں گے تو اس ایسی آگ بھڑکے کی جسے یہ منافق ٹولا بھجا نہیں سکے گا۔

انہوں نے اعلیٰ عدلیہ کو اپیل کی کہ صورتحال کا نوٹس لیں کیوں کہ یہ قانون کرپشن اور پئسے کے زور پر بلدیاتی الیکشن خرید کرنے کی تیاری ہے۔ ایم ایم اے کے پارلیمانی لیڈر عبدالرشید نے کہا صوبائی اسمبلی کے استحقاق کو مجروع کیا گیا ہے پ پ نے غیر جمہوری رووے کا مظاہرہ کیا ہے اور حزب اختلاف کو بحث کا موقع نہیں دیا گیا انہوں نے بل کو بلدیاتی انتخابات میں پ پ کی جانب سے دھاندلی کا آغاز قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہم کٹپٹلی بلدیاتی نظام نہیں چاہتے۔

پی ٹی آئی رکن ارسلان تاج نے کہا کہ اجلت میں قانون لانے کی وجہ بلدیاتی اداروں کو ان کے تمام اختیارات سے محروم کرنا ہے ٹائون کا جو نظام متعارف کروایا جارہا ہے اس میں بلدیاتی اداروں کے پاس کوئی اختیارات نہیں بچیں گے کراچی کی عوام شہر کے میئر کا انتخاب براھ راست طریقہ کے ذریعے چاہتی ہے لیکن یہ لوگ دھاندھلی کی خاطر خفیہ رائے شماری کا طریقہ کار رائج کرانا چاہتے ہیں ڈٰیم ایم سز کے پاس تعلیم اور صحت کے اختیارات تھے اس ترمیم کی وجہ سے سب ختم ہوجائیں گے اس کالے قانون کی ہر سطح پر مزاہمت کریں گی

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments