سندھ ہائی کورٹ ، انٹر سٹی پبلک ٹرانسپورٹ سی این جی سیلنڈرز کی تنصیب پر پابندی کے خلاف درخواست پر فریقین کو 9 فروری کو تیاری کرکے پیش ہونے کا حکم

پیر 17 جنوری 2022 15:50

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 17 جنوری2022ء) سندھ ہائی کورٹ نے انٹر سٹی پبلک ٹرانسپورٹ سی این جی سیلنڈرز کی تنصیب پر پابندی کے خلاف درخواست پر فریقین کو 9 فروری کو تیاری کرکے پیش ہونے کا حکم دیدیا۔پیرکوسندھ ہائیکورٹ میں انٹر سٹی پبلک ٹرانسپورٹ سی این جی سلنڈرز کی تنصیب پر پابندی کے خلاف درخواست کی سماعت ہوئی۔درخواستگزار کے وکیل نے موقف دیا کہ عدالت نے غیر معیاری سیلنڈرز کی تنصیب سے متعلق قانون سازی کا حکم دیا۔

(جاری ہے)

انٹر سٹی گاڑیوں میں مستند کمپنیوں سے تصدیق شدہ سیلنڈرز کی لگانے کی اجازت دی جائے۔ وکیل سی این جی ایسوسی ایشن نے موقف دیتے ہوئے کہا کہ حکومت نے غیر قانونی طور پر سی این جی سیلنڈر کی تنصیب پر پابندی عائد کی۔ عدالت نے ریمارکس دیئے گاڑیوں میں لگے سی این جی سلینڈرز چلتے پھرتے بم ہیں۔ گاڑیوں میں لگے سی این جی سیلنڈرز بم سے کم نہیں ہیں۔ انسانی جان و مال کے لیے خطرے کا سبب بنے سلینڈر گاڑیوں میں کیسے لگانے کی اجازت دی جاسکتی عدالت نے درخواست گزار اور دیگر فریقین کو 9 فروری کو تیاری کرکے پیش ہونے کا حکم دیدیا۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments