جوڈیشل مجسٹریٹ ملیر نے ناظم جوکھیو قتل کیس میں پراسیکیوشن کو حتمی چالان پیش کرنے 22 جنوری تک مہلت دیدی

پیر 17 جنوری 2022 15:50

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 17 جنوری2022ء) جوڈیشل مجسٹریٹ ملیر نے ناظم جوکھیو قتل کیس میں پراسیکیوشن کو حتمی چالان پیش کرنے 22 جنوری تک مہلت دیدی۔پیرکو کراچی ملیر کورٹ میں جوڈیشل مجسٹریٹ کے روبرو ناظم قتل کیس کی سماعت ہوئی۔ تفتیشی افسر اور فریقین کے وکلا عدالت میں پیش ہوئے۔ تفتیشی افسر نے بتایا کہ چالان اسکروٹنی کے لئے محکمہ پراسیکیوشن کے پاس ہے۔

پراسیکیوٹر نے موقف دیا کہ اسکروٹنی مکمل ہوتے ہی چالان پیش کردیا جائے گا۔ پراسیکیوشن نے مقدمے کا حتمی چالان پیش کرنے کے لئے مزید مہلت طلب کرلی۔

(جاری ہے)

مدعی کے وکیل نے موقف دیتے ہوئے کہا کہ دہشتگردی کی دفعات شامل کرنے کی درخواست دائر کی ہوئی ہے۔ حتمی چالان پیش ہونے کے بعد دہشتگردی کی دفعات شامل ہونے پر دلائل دینگے۔ ملزمان کی ضمانت کی درخواستیں منسوخ ہونے کے بعد پراسیکیوشن بوکھلاہٹ کا شکار ہے۔

سیشن عدالت نے ضمانتیں مسترد کرنے کے حکم نامے میں مقدمہ دہشتگردی کا قرار دیا ہے۔ سیشن عدالت کے حکم نامے کے بعد پراسیکیوشن از سر نو اسکروٹنی کررہی ہے۔ بظاہر ایسا لگتا ہے کہ از سر نو اسکروٹنی کے باعث تاخیر ہورہی ہے۔ عدالت نے پراسیکیوشن کو مہلت دیتے ہوئے 22 جنوری تک حتمی چالان پیش کرنے کا حکم دیدیا۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments