تحریک انصاف کراچی کے نظریاتی کارکنوں نے سندھ میں تنظیم سازی کو مستردکردیا

ملک بھرکی تنظیموں کے تحلیل کے بعد فوری انٹر پارٹی الیکشن کرائے جائیں ، ممبران قومی و صوبائی اسمبلی کے تمام کوارڈینٹرز کو15یوم میں ہٹا یا جائے ،اشرف قریشی

پیر 17 جنوری 2022 23:26

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 17 جنوری2022ء) تحریک انصاف کراچی کے نظریاتی کارکنوں نے سندھ میں تنظیم سازی کو مسترد کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ملک بھرکی تنظیموں کے تحلیل کے بعد فوری انٹر پارٹی الیکشن کرائے جائیں ، ممبران قومی و صوبائی اسمبلی کے تمام کوارڈینٹرز کو15یوم میں ہٹا یا جائے ، پارٹی کے منظم اور نظریاتی ورکرز کو ان کا حقیقی مقام دینے کے لئے گورنر سندھ ورکرز ویلفیئر سیل قائم کریں اورنظریاتی ان کا جائز مقام دیا جائے ۔

یہ مطالبات گزشتہ روز تحریک انصاف کے دفتر انصاف ہائوس کراچی میں ورکرز مشاورتی اجلاس میں پارٹی کے بانی رکن و سابق صدر کراچی اشرف جبار قریشی خطاب میں کیا ۔ اجلاس میں بڑی تعداد میں کارکن شریک تھے اور شرکا نے قومی و صوبائی اسمبلی کے خلاف شکایت کے انبار لگا ئے ۔

(جاری ہے)

اشرف جبار قریشی نے کہاکہ عمران خان نے ہمیشہ نظریاتی کارکنان کو مقام دیا ہے مگر چند مفاد پرست عناصر نے اقتدار میں آنے کے بعد چیئر مین عمران خان اور پارٹی ورکرز کے دمیان دوریاں پیدا کیں مگر ہم آپ کو یقین دلا تے ہیں کہ آپ میں پائی جانے والی تشویش اور مسائل کو حل کرنے کے لئے ورکرز کی آواز بنوں گا قیادت کو ورکرز کی آواز پہنچاں گا۔

اشرف قریشی نے کہاکہ ہم عمران خان کے نہیں مفاد پرست کرپٹ عناصر کے خلاف ہیں کارکنان معظم اور متحد رہیں ہم ملکرعمران خان کے ہاتھ مضبوط اوران کے ارد گرد جمع پارٹی دشمن عناصر سے جان چھڑائیں گے اجلاس میں کارکنان نے قیادت کے لئے اشرف قریشی کو متعدد تجاویز دی سندھ خصوصا کراچی میں پی ٹی آئی کو منظم اور متحد کرنے کے لئے چیئر مین عمران خان تک ان تجاویز کو پہنچانے کا کہا مشاورتی اجلاس میں کارکنان PTIنے متفقہ طور پر متعدد قرارد کی منظوری دی جس میں MNA,sاور MPA,sکے من پسند کوارڈینٹر کو15یوم میں ہٹانے اور علاقائی ترقیاتی امور میں عوامی تجاویز کے ساتھ نظریاتی ورکرز کی مشاورت کو بھی شامل کیا جائے،بصورت دیگر ہر ترقیاتی امور کی بہتر انجام دیہی اور کرپشن کی روک تھام کے لئے قومی و صوبائی اسمبلی حلقہ میں کھلی کچہریاں لگا ئی جائیں گی،کارکنان نے متفقہ قرارداد میں میں مطالبہ کیا کہ کراچی سمیت ملک بھر کی تنظیم فوری تحلیل کی جائے،تنظیمی عہدوں میں انصاف کے تقاضے پورے نہیں کئے گئے بنیادی کارکنان کو نظر انداز کیا گیا لہذا مطالبہ کرتے ہیں کہ فوری طور پر انٹرا پارٹی الیکشن کرایا جائے،مرکزی رہنماں اور منسٹرز کے دورے پر کراچی کے کارکنان کو مسلسل نظر انداز کیا جاتا ہے یہ سلسلہ بند ہونا چاہیئے کارکنان کو ان کا مقام دیا جانا چاہیئے اس موقع پر پی ٹی آئی رہنما اشرف قریشی نے کارکنان کے مطالبات پر اپنی تجویز پیش کرتے ہوئے گورنر سندھ عمران اسماعیل سے اپیل کی کہ کارکنان کے مسائل کے حل اور اور ان میں پائی جانے والی بے چینی کے خاتمے کے لئے ورکرز ویلفیئر سیل کا قیام عمل میں لایا جائے جس میں وہ خود روزانہ کی بنیاد پر کارکنان سے ملاقات کرکے مسائل اور بے چینی کو دور کریں۔

کراچی شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments